September 30, 2020

آندھراپردیش میں مرغوں کی لڑائی پرپولیس کی خصوصی نظر

آندھراپردیش 13 جنوری (اردولیکس) ریاست آندھراپردیش کے اضلاع گنٹور‘ کرشنا‘ مشرقی و مغربی گوداوری کے ضلع انتظامیہ کی جانب سے سنکرانتی کے موقع پر مرغوں کی لڑائی کے روایتی کھیل پر نظر رکھنے کے لئے وسیع انتظامات کئے گئےہیں۔ 700کروڑ روپئے کا سٹہ ان روایتی مرغوں کی لڑائی پر لگائے جانے کا امکان ہے ۔ سنکرانتی کے موقع پر شرطیں لگا کر مرغوں کی لڑائی کا اہتمام ساحلی آندھراپردیش کے اضلاع میں کئی صدیوں سے جاری ہے ۔ مرغوں کی لڑائی کے خلاف ہائی کورٹ کے احکامات کی روشنی میں پولیس نے ان اضلاع میں جامع اقدامات کئے ہیں۔ پولیس نے خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف معاملات درج کئے ہیں اور کئی مقامات پر مرغوں کو ضبط بھی کیا گیا۔ پولیس نے اراضی مالکین کو انتباہ دیا کہ مرغوں کی روایتی لڑائی کے لئے اراضی کو مہیا نہ کروائیں۔ ضلع کرشنا کے کلکٹر پی لکشمی کانتم کا کہنا ہے کہ مرغوں کی لڑائی کے مقامات پر نظر رکھنے منڈل اور ڈویژنل سطح پر کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں۔ مغربی گوداوری کے اے ایس پی نے کہا کہ لوگوں میں شعور بیدار کرنے کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں کہ مرغوں کو لڑانا ایک جرم ہے۔ شعوربیداری کیلئے جگہ جگہ بیانر لگائے جارہے ہیں۔ ضلع مغربی گوداوری کے کلکٹر کے بھاسکر نے انتباہ دیا کہ اگر کہیں مرغوں کی لڑائی کا اہتمام کیا جاتا ہے تو متعلقہ ڈویژنوں کے ذمہ داروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔

Post source : urduleaks news network