December 13, 2018

آزمائش کے لمحات میں اللہ نے میری مدد کی : ہادیہ

آزمائش کے لمحات میں اللہ نے میری مدد کی : ہادیہ
Photo Credit To arrange

دہلی 14 مارچ (ایجنسیز) شفیع جہاں اور ان کی نو مسلم بیوی ہادیہ نے کہا ہے کہ وہ سماج کو ایک پیغام دینا چاہتے ہیں کہ ان کی شادی ایک ناٹک نہیں تھی ’لوجہاد‘کا الزام ایک فریب تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ اب پرسکون زندگی گزارناچاہتے ہیں۔ سپریم کورٹ کی جانب سے شادی کی بحالی کے فیصلہ کے بعد پہلی مرتبہ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمیں ڈھائی سال تک قانونی لڑائی لڑنی پڑی۔ اس دوران مشکلات بھی پیش آئیں۔ لیکن ہم نے ہمت نہیں ہاری کیونکہ ہمیں یقین تھا کہ سپریم کورٹ میں ہماری جیت ہوگی۔ ہادیہ نے کہا کہ میں شفیع جہاں سے مل کر راحت محسوس کررہی ہوں‘میں اپنی زندگی کے خوشگوار لمحات سے لطف اندوز ہورہی ہوں۔ میں پرمسرت اور پرسکون زندگی گزارنا چاہتی ہوں۔ ہادیہ نے اپنے گزرے ہوئے وقت کو یاد کیا جبکیرالا ہائیکورٹ نے ان کی شادی کو منسوخ کرتے ہوئے انہیں والدین کے حوالےکردیا تھا۔ ہادیہ نے بتایا کہ مجھے ذہنی اور جسمانی اذیتوں سے گزرنا پڑا۔ مجھے ایسے لوگوں کے لکچر سننے پڑے جنہیں میں پسند نہیں کرتی تھی۔ہادیہ نے بتایا کہ یہ لوگ سنگھ پریوار سے تعلق رکھتے تھے۔ ا نہوں نے سارازور اس بات پر لگایا تھا کہ میں ہندو ازم کی طرف واپس ہوجاؤں۔ میں نے
سپریم کو رٹ میں جمع کردہ اپنے حلفنامہ میں لکھا تھا کہ مجھے ہولناک اذیتیں دی گئیں لیکن میڈیا نے اس بات پر کوئی خاص توجہ نہیں دی۔ ہادیہ نےبتایا کہ اگست2016ء میں اس وقت جب میں اپنے ماں باپ کی تحویل میں تھی گھرپر راہول ایشور نام کا ایک شخص آیا تھا جو اس بات کا ثبوت ہے کہ اس معاملہ میں سنگھ پریوار کا رول ہے۔ میرا سوال یہ ہے کہ ا س عرصہ کے دوران صرف راہول ایشور کو ہی مجھ سے ملنے کی اجازت کیوں دی گئی ؟ جبکہ کئی دیگرافراد کو مجھ سے ملنے سے روک دیا گیا۔ یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ یہ سنگھ پریوار کا ایجنڈہ تھا۔ راہول جو ایک جہد کار ہے جو سنگھ پریوار سے قریبی تعلق رکھتا ہے۔ مجھ پر دباو ڈالا گیا کہ میں اسلام ترک کردوں اور ہر وقت میری ماں سے میرا جھگڑا ہوجاتا اور جب دباو ناقابل برداشت ہوجاتا تو میں اپنی ساری توجہ عبادت پر لگادیتی اور دعاوں میں مشغول ہوجاتی۔ یہ ایسی چیز تھی جو مجھے سکون فراہم کرتی تھی۔ لیکن اب میری زندگی میں آزمائش کامرحلہ گزرچکا ہے میں نے پورے شعور کے ساتھ مذہب تبدیل کرنے کا فیصلہ کیاتھا۔ شفیع نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلہ نے لوجہاد کے دعووں کی قلعی کھول دی-

Post source : agencies