August 14, 2020

وزارت کھیل کود نے سی ڈبلیوجی میڈل یافتہ گان کو نقد انعامات سے نوازا

 

نئی دہلی ،یکم ؍مئی : نوجوانوں کے اموروکھیل کود کےوزیر(آزدانہ چارج )کرنل راجیہ وردھن راٹھونے کہا ہےکہ ہمارے کھلاڑیوں میں صرف ہنرمندی پرمبنی کھیلوں میں ہی نہیں بلکہ ہرطرح کے کھیلوں میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کی صلاحیتیں موجود ہیں ۔حال ہی منعقدہ دولت مشترکہ کے کھیلوں 2018میں تمغہ حاصل کرنے والے کھلاڑیوں کے لئے منعقدہ ایک تہنیتی تقریب میں انھوں نے کہا ہے کہ کھلاڑی ملک کے سفیرہوتے ہیں اورنوجوانوں کے لئے مثالی شخصیت کی رکھتے ہیں اورہربھارتی کوان کے تئیں فخرکا احساس ہوتاہے ۔ کھیل کود کو سافٹ پاورکانام دیتے ہوئے انھوں نے کہا ہم کسی طرح کے سافٹ پاورمثلاًفلموں ، کھانوں او ر ثقافت کے لئے سرمایہ فراہم نہیں کرتے، لیکن ہم آپ کو سرمایہ فراہم کرتے ہیں ۔ انھوں نے مزید وضاحت کی کہ کھیل کود کے لئے سرمائے کی کمی نہیں ہے لیکن ہرایک پیسے کا استعمال بھرافادیت کے ساتھ کیاجاناچاہیئے ۔ میری کوم ، میرابائی چانو، نیرج چوپڑا ،سمِت ملک ، سشیل کمار، ونیش پھوگاٹ ، راہل آورے، سائنانہوال ،پی وی سندھو، کدمبی سری کانتھ ، دیپیکاپلی کل سورو گھوسال ،وکاس کرشن ، گوروسولنکی ، مانوبھاکر، جیورائے ، تیجسونی ساون ، حناسدھو، منیکا بتراسمیت نو کھیل کود کے شعبوں کے 56کھلاڑیوں کو اوردیگرکھلاڑیوں کو نقدایوارڈ سے نوازاگیا۔ موٹے طورپر ہرایک طلائی تمغہ جیتنے والے کھلاڑی کو 30لاکھ روپے کے نقد انعام سے نوازاگیا ، جب کہ نقرئی تمغہ جیتنے والوں کو20لاکھ روپے اور کانسے کا تمغہ جیتنے والے کو 10 دس لاکھ روپے سے نوازاگیا۔

 

          ایک کھلاڑی کے طورپراپنے تجربات ساجھاکرتے ہوئے کرنل راٹھورنے کہاکہ ایسا نہیں ہوگاکہ کبھی کوئی چیز معمول کے خلاف ہوتاہم ہمیں توجہ مرکوز کرنے کا فن سیکھ کررکاوٹوں کو دورکرنا ہوگا۔ ایک کھلاڑی کا پورا سفراسپورٹ اتھارٹی آف انڈیا کے ساتھ قریبی تال میل بنا کر طے ہوتاہے اورکھیل کود کی وزارت اورکھیل کود کی ٹیم تمام معاملات اور تنازعات کا حل نکالنے کے لئے کمربستہ ہے ۔ وزیرموصوف نے کہاکہ وہ اپنے مطالبات کا جواز پیش کریں اورہرکام ذمہ داری سے انجام دیں ۔ انھوں نے کامیاب کھلاڑیوں سے کہاکہ وہ مستقبل پربھی نظررکھیں۔

 

 

Post source : Pib