May 20, 2019

اسمارٹ فون‌کے استعمال سے بچوں میں اخلاقی گراوٹ، ڈان ہائی اسکول میں اے سی پی میر چوک بی آنند کا خطاب 

اسمارٹ فون‌کے استعمال سے بچوں میں اخلاقی گراوٹ، ڈان ہائی اسکول میں اے سی پی میر چوک بی آنند کا خطاب 

حیدرآباد11؍فروری(پریس نوٹ) اسسٹنٹ کمشنر پولیس میر چوک بی آنند نے متنبہ کیا ہے کہ کم عمری میں اسمارٹ فونس کے استعمال سے بچوں میں جرائم کے رجحانات پیدا ہورہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جو بچے کم عمری میں اسمارٹ فونس استعمال کرتے ہیں ان کی تعلیم متاثر ہورہی ہے ۔وہ ڈان ہائی اسکول ملک پیٹ میں ایک کتاب کی رسم اجراء تقریب کے بعد خطاب کررہے تھے ۔اعلیٰ پولیس عہدیدار نے نشاندہی کی کہ اسمارٹ فونس کے ذریعہ سوشل نٹ ورکنگ سائٹ پر انجانے افراد سے رابطہ کے سنگین نتائج سامنے آرہے ہیں ۔اے سی پی آنند نے کہا کہ اسمارٹ فونس کے استعمال کی وجہ سے بچوں میں اخلاقی گراوٹ بھی پیدا ہورہی ہے ۔اعلیٰ پولیس عہدیدار نے کہا کہ کم عمری میں اسمارٹ فونس کے استعمال سے سماجی مسائل کے علاوہ صحت کے مسائل بھی پیدا ہورہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ 20تا22سال کی عمر کے بعد سیل فونس کا استعمال کیا جانا چاہیے ۔انہوں نے دسویں جماعت کے طلباء کے لئے فائدہ مند ریاضی کے کتاب مرتب کرنے پر پروفیسر عبد المقصود کی ستائش کی ۔اس موقع پر کتاب کے مصنف پروفیسر عبد المقصود نے کہا کہ اس کتاب کی مدد سے طلباء ریاضی کے بنیادی قواعد سے واقف ہوسکتے ہیں اور ایس ایس ای میں زیادہ سے زیادہ نشانات حاصل کرسکتے ہیں۔تقریب میں ڈائرکٹر ڈان ایجوکیشنل سوسائٹی جناب فضل الرحمن خرم نے مہمانوں کا استقبال کیا ۔ممتاز ماہر امراض جلد ڈاکٹر غلام عباس نے تقریب کی صدارت کی ۔ماہر تعلیم ساجد احمد ،اشوک کمار اور دوسرے اس موقع پر موجود تھے ۔

 

 

Post source : press note