August 24, 2019

پاپولر فرنٹ نے کٹھوعہ معاملے میں کورٹ کے فیصلے کا کیا خیرمقدم

نیی دہلی-12 جون ( پریس نوٹ)پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے چیئرمین ای ابوبکر نے میڈیا کو جاری ایک بیان میں کٹھوعہ معاملے میں پٹھانکوٹ فاسٹ ٹریک کورٹ کے فیصلے کا خیرمقدم کیا ہے۔ واضح رہے کہ کچھ عرصہ پہلے جموں و کشمیر کے کٹھوعہ ضلع میں ایک چھوٹی لڑکی کی بہیمانہ طریقے سے عصمت دری کی گئی اور اسے چار روز تک گاؤں کے ایک مندر میں بیہوش رکھنے اور زدوکوب کرنے کے بعد قتل کر دیا گیا تھا۔کورٹ نے سات میں سے چھ ملزموں کو مجرم پاتے ہوئے تین کو عمرقید اور اس مقدمے کو ختم کرنے کے مجرم پائے گئے تین پولیس افسران کو پانچ سال کی سزا سنائی۔ یہ اس بچی کے اہل خانہ، وکلاء اور ان تمام ایماندار افراد و جماعتوں اور ملک بھر میں انصاف کی آواز بلند کرنے والوں کی اجتماعی جیت ہے جنہوں نے انصاف کی لڑائی میں متاثرہ خاندان کی حمایت کی۔

یہ جرم بچی پر ڈھائے گئے ظلم ہی نہیں بلکہ اس وجہ سے بھی بہت بڑا تھا کہ یہ نسلی منافرت کا نتیجہ تھا۔ کچھ لوگوں نے ملزمین کی حمایت میں قانونی کاروائی کے خلاف زبردست احتجاج حتیٰ کہ عوامی مظاہرے بھی کیے، جس نے پورے ملک کو حیرت میں ڈال دیا۔ سپریم کورٹ کو اس مقدمے کو ریاست سے باہر لانا پڑا کیونکہ کٹھوعہ کے وکیلوں نے اس سنسنی خیز معاملے میں کرائم برانچ کے افسران کو چارج شیٹ فائل کرنے سے روکنے کی کوشش کی۔ اس جیت سے تمام انصاف پسند لوگوں نے راحت کی سانس لی ہے۔ لیکن ہمیں ابھی بھی محتاط رہنے کی  ضرورت ہے کیونکہ انصاف کو روکنے کی کوشش آگے بھی ہو سکتی ہے اور ہمیں انصاف کو برقرار رکھنے کے لیے اور زیادہ سخت لڑائی کی ضرورت پڑے گی۔

Post source : Press release