July 17, 2019

عادل آباد میں میڈکل طلبہ نے وزراء کا گھیراو کیا

عادل آباد میں میڈکل طلبہ نے وزراء کا گھیراو کیا

عادل آباد14-جولائی(اردو لیکس)

مستقرعادل آبادکےرمس ہاسپٹل میں وزیرصحت ای راجندر نےدورہ کرتےہوئےرمس ہاسپٹل کےمختلف شعبہ جات کا جائزہ لیا اور رمس ڈاکٹرس و انتظامیہ کی ایک بطورجائزہ میٹنگ طلب کرتےہوئےمختلف امورپرتبادلہ خیال کیااوررمس کےحالات سےواقفیت حاصل کی۔اس ضمن میں رمس انتظامیہ کی میڈیکل کالج کی تیسری منزل پرمیٹنگ حال میں منعقدہ تقریب میں آفشل میٹنگ کہتےہوئےبعض سیکوریٹی گارڈس اور بعض پولیس عہدیداران نےاکثرالیکٹرانک و پرنٹ میڈیانمائندوں کوکوریج کیلئےاندرداخل ہونےکی اجازت نہیں دی۔میڈیانمائندےباہرہی اندرداخل ہونےکاانتظارکررہےتھے۔کچھ ہی دیر میں میٹنگ ہال سےپارٹی کےکارکنان باہرنکلتےہوئےنظرآئے۔اسپرمیڈیانمائندوں نے یہ کہتےہوئےکہ یہی آفشل لوگ ہیں جنکی وجہ سےجمہوریت کےچوتھےستون صحافیوں کونیوزکوریج کیلئےاندرداخل ہونےنہیں دیاگیا۔اس منظر کو میڈیانمائندوں نےاپنےکیمروں میں محفوظ کرلیا۔میڈیانمائندوں نےتشویش کااظہارکرتےہوئےکہاکہ اگراسی طرح میڈیاجوکےآزادہےانکےساتھ نارواسلوک چلتارہااورحکومت اس جانب توجہ نہیں دیگی تو وہ دن دور نہیں کہ میڈیاکی اہمیت ناکہ درجہ میں رہجائےگی۔میڈیانمائندوں کےمطابق اسطرح کےپروگراموں میں میڈیاکیلئےالگ سےنظم کیاجاناچاہئے۔بعدازاں وزیرصحت ای راحندر کی واپسی کےموقع پرمیڈیکل کالج کےروبرومیڈیکل کالج کی طالبات نےاندراکرن ریڈی کی گاڑی کاگھیراؤ کرتےہوئےزبردست احتجاجی دھرنامنظم کیا۔اورمختلف مسائل کی یکسوئی کاپرزورمطالبہ کیا۔پولیس نےمداخلت کرتےہوئےطالبات کو منتشرکرنےکی کوشش کی لیکن طالبات نےاپنےاحتجاج کوبرقراررکھا۔ وزیر صحت نےجلد مسائل کی یکسوئی کا تیقن دیا۔اس موقع پرٹی آرایس قائدین؛رمس انتظامیہ و میڈیانمائندےکثیرتعدادمیں موجودتھے۔پولیس کی جانب سےسخت حفاظتی انتظامات کئےگئےتھے۔

Post source : urduleaks news network