August 19, 2019

امریکہ روانگی سے قبل طلبہ کا اورینٹیشن۔ کیتھرین ہڈا اور ڈاکٹر محمد اسلم پرویز کا خطاب

امریکہ روانگی سے قبل طلبہ کا اورینٹیشن۔ کیتھرین ہڈا اور ڈاکٹر محمد اسلم پرویز کا خطاب

حیدرآباد 19 جولائی (پریس نوٹ) اعلیٰ تعلیم کے حصول کے لیے امریکہ روانہ ہونے والے طلبہ دراصل وہاں ہندوستان کے نمائندے کی حیثیت رکھتے ہیں۔ تہذیب، بھائی چارہ، رواداری، دوسروں کی مدد ، ہندوستان کی پہچان ہیں۔ جب آپ امریکہ میں پہنچیں تو ان صفات کے ساتھ اپنی شناخت برقرار رکھیں۔ ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر محمد اسلم پرویز، وائس چانسلر، مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی نے آج امریکہ جانے والے طلبہ کے سالانہ ماقبل روانگی اورینٹیشن پروگرام میں کیا۔ یو ایس انڈیا ایجوکیشنل فاﺅنڈیشن (یو ایس آئی ای ایف) ، قونصل خانہ امریکہ، حیدرآباد نے اس پروگرام کا یونیورسٹی کے سی ایس ای اکیڈیمی آڈیٹوریم میں انعقاد عمل میں لایا۔ اس پروگرام میں قونصل خانہ سے تعلیمی ویزے حاصل کرچکے ریاست تلنگانہ کے تقریباً 40 طلبہ نے حصہ لیا۔ ان طلبہ کا تعلق ریاست کے مختلف کالجس اور جامعات سے ہے۔
اس موقع پر قونصل جنرل محترمہ سی جی کیتھرین ہڈا نے کہا کہ امریکہ ہندوستان اور بین الاقوامی طلبہ کے لیے ایک بہترین مقام ہے۔ وہاں پر تقریباً 4600 تعلیمی ادارے ہیں جو دنیا بھر سے آئے طلبہ کو معیاری تعلیم فراہم کر رہے ہیں۔ امریکہ میں 1.96 لاکھ ہندوستانی طلبہ تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کی یونیورسٹیوں کا ماحول صیانتی اعتبار سے نہایت محفوظ ہے۔ اس لیے وہاں طلبہ کی ثقافتوں کا تنوع نظر آتا ہے۔ آپ وہاں جاکر پڑھیں، سیکھیں اور کھلے ذہن کے ساتھ واپس آئیں۔
ڈاکٹر مونیکا سیٹیا، ریجنل آفیسر (یو ایس آئی ای ایف) نے ابتداءمیں خیر مقدم کیا اور کارروائی چلائی۔ جناب آکاش سوری، اسسٹنٹ پبلک افیر آفیسر ، قونصل خانہ امریکہ بھی شہ نشین پر موجود تھے۔ اس موقع پر ڈاکٹر محمد اسلم پرویز، نے اردو یونیورسٹی کے بابِ علم کا نہایت خوبصورت پورٹریٹ، یادگاری تحفہ کے طور پر محترمہ کیتھرین ہڈا کو پیش کیا جو اس ماہ کے آخر میں اپنی میعاد کی تکمیل کے بعد امریکہ واپس ہو رہی ہیں۔ ڈاکٹر ایم اے سکندر، رجسٹرار بھی اس موقع پر موجود تھے۔

Post source : press note