September 22, 2019

مانو، سوشل ورک میں طلبہ کا اورینٹیشن پروگرام

حیدرآباد، 23 اگست (پریس نوٹ) مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی ، شعبہ سوشل ورک کے زیر اہتمام 9 تا 21 اگست ماسٹر آف سوشل ورک کے طلبہ کا تعارفی پروگرام منعقد ہوا۔ پروفیسر محمد شاہد، صدر شعبہ نے تعارفی پروگرام کی اہمیت و افادیت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ علم‘ ہنر اور رویہ کو بنیادی قرار دیا اور کہا کہ ایم ایس ڈبلیو کی تعلیم کے دوران کلاسس، فیلڈ ورک اور اسکل لیب میں ان پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ اس سلسلے میں ذات پات کی تفریق کے انسداد کے تئیں طلبہ میں حساسیت پیدا کرنے ”انڈیا ان ٹچڈ“ ڈاکیومنٹری بھی دکھائی گئی۔
میڈیکل آفیسر، اربن پی ایچ سی، حکیم شاہ نے بنیادی نظامِ صحت اور سماجی خدمات پر خیالات کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ سوشل ورکرس کو سماج کے پسماندہ طبقات کے لیے صحت کے بہتر خدمات کی فراہمی کو یقینی بنانا چاہیے۔ ڈاکٹر فرزانہ خان، پروگرام ہیڈ، مائی چوائسس فاﺅنڈیشن نے گھریلو تشدد اور بچوں کی جنسی ہراسانی کی جانب توجہ دلائی۔ انہوں نے طلبہ کو خواتین کے مسائل پر کام کرنے کی تلقین کی۔ جناب مظہر حسین‘ ڈائرکٹر‘ کووا نے سماج کے پسماندہ طبقات کو بااختیار بنانے پر زور دیا۔
سوشیل ورک کے میدان میں استعمال ہونے والی تکنیک سے متعلق ایک روزہ ورکشاپ کا بھی انعقاد کیا گیا۔پروگرام کے حصے کے طور پر طلبا کو ڈان باسکو نوجیون بھی لے جایا گیا۔

Post source : press note