October 23, 2019

ٹی آر ایس کو ایک بھی ووٹ نہ دینے حضور نگر کے اقلیتوں سے محمد علی شبیر کی اپیل

ٹی آر ایس کو ایک بھی ووٹ نہ دینے حضور نگر کے اقلیتوں سے محمد علی شبیر کی اپیل

حضور نگر -12 اکتوبر ( اردو لیکس) سابق وزیر اور تلنگانہ قانون ساز کونسل میں سابق اپوزیشن لیڈر محمد علی شبیر نے حضور نگر کے اقلیتوں پر زور دیا کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ ان کا ایک بھی ووٹ  ضمنی انتخاب میں  ٹی آر ایس کو نہیں پڑے ۔حضور نگر کے نیدرچیرلا منڈل میں اقلیتوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے شبیر علی نے یاد دہانی کی کہ چیف منسٹر چندریشیکھر راؤ نے ہر معاملہ میں مسلم طبقہ کو دھوکہ دیا ہے۔ ٹی آر ایس حکومت کی ناکامیوں کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کے سی آر نے مسلمانوں کو ملازمت اور تعلیم میں 12 فیصد کوٹہ دینے کے وعدے کو پورا نہیں کیا۔ انہوں نے وقف بورڈ کو عدالتی اختیارات نہیں دیئے اور نہ ہی ایک انچ زمین وقف بورڈ کو واپس لی۔ اسی طرح ٹی آر ایس حکومت نے اردو کو نظرانداز کیا ، ایک بھی اردو اساتذہ کا تقرر نہیں کیا اقلیتی بہبود کے بجٹ میں 30 فیصد سے زیادہ کمی کی گئی اور کبھی بھی مکمل مختص بجٹ خرچ نہیں کیا گیا ۔درجنوں اقلیتی کالجوں کو بند کردیا گیا ۔ اقلیتی طلبہ کو فیس ریمبرسمنٹ اور اسکالرشپ  کی ادائیگی سے محروم کیا گیا ۔  مرکزی بجٹ میں اقلیتی بہبود کے بجٹ میں کٹوتی پر چندرشیکھرراو خاموش رہے اور اقلیتی نوجوانوں میں بڑھتی بے روزگاری سے نمٹنے کے لئے کچھ نہیں کیا۔محمد علی شبیر  نے الزام لگایا کہ کے سی آر سیکولر نہیں ہین جیسا کہ وہ سیکولر ہونے کا دکھاوا کرتے ہیں۔ کے سی آر نے وزیر اعظم نریندر مودی کے ہر فیصلہ کی تائید کی ہے چاہے وہ جی ایس ٹی ہو یا صدر اور نائب صدر کے انتخابات ، راجیہ سبھا کے ڈپٹی چیئرمین کا انتخاب، این آئی اے ترمیمی بل اور سب سے اہم تین طلاق  بل جیسے تمام فیصلوں کی حمایت کی۔ انھوں نے کہا کہ آلیر  انکاؤنٹر کی تحقیقات کی رپورٹ اور کشن باغ میں فائرنگ کا واقعہ ابھی سامنے نہیں آیا ہے۔ ٹی آر ایس حکومت مکہ مسجد دھماکے کے معاملے میں سی بی آئی کی خصوصی عدالت کے فیصلے کو آج تک اعلی عدالت میں اپیل  نہیں کی ۔سابق وزیر  نے کہا  اس نے عنبرپیٹ میں یکخانہ مسجد کو شہید کردیا اور سیکرٹریٹ کے احاطے میں مزید دو مساجد کو شہید کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے  کانگریس قاید نے ٹی آر ایس حکومت کو تنقيد کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس نے میلا چیرو میں شادی خانہ تعمیر کرنے کے وعدہ کرتے ہوئے اسے پورا نہیں کیا ۔جہاں  اقلیتی آبادی زیادہ ہے۔ محمد علی شبیر نے کہا کہ وہ  اتم کمار ریڈی کی طرف سے  وعدہ کرتے ہیں کہ  50 لاکھ روپے کے ایم پی  فنڈز سے شادی خانہ کو تعمیر کیا جائے گا ۔

Post source : Urduleaks