July 07, 2020

بھینسہ واقعہ پر امیرحلقہ جماعت اسلامی ہند تلنگانہ مولانا حامدمحمدخان کا اظہارتشویش

بھینسہ واقعہ پر امیرحلقہ جماعت اسلامی ہند تلنگانہ مولانا حامدمحمدخان کا اظہارتشویش

حیدرآباد-14 جنوری( پریس ریلیز)امیرحلقہ جماعت اسلامی ہند تلنگانہ محمدحامدمحمدخان نے بھینسہ میں پیش آئے واقعات کوافسوس ناک قراردیتے ہوئے شدید الفاظ میں ان کی مذمت کی اور اسے حکومت اور پولیس کی ناکامی قراردیا۔ انہوں نے کہا کہ اگر پولیس بروقت کاروائی کرتی توحالات پر قابوپایا جاسکتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ شرپسندوں کی منصوبہ بند سازش معلوم ہوتی ہے جس کے ذریعہ وہ پرامن فضاء کو مکدرکرنا چاہتے ہیں۔ امیرحلقہ حامدمحمدخان نے کہااشرارنے نہ صرف پولیس کی موجودگی میں ہنگامہ آرائی کی اورمسلمانوں کے مکانات پرحملے کئے بلکہ مساجد کو بھی نشانہ بنایا اور قرآن مجید کی بے حرمتی کی،جانمازوں کونذرآتش کیااوریہ سب شہرمیں پولیس کی بڑی تعدادمیں تعیناتی کے بعد ہوا ہے جو قابل افسوس ہے۔ مولانا نے مزیدکہا کہ مقامی رکن پارلیمنٹ سویم باپوراؤکی جانب سے اشتعال انگیز بیانات دئیے جانے کے بعد ماحول کشیدہ ہوا اور منصوبہ بند انداز میں اشرارنے یہ کاروائی انجام دی۔ دوسری طرف پولیس نے اپنے گھروں کی حفاظت کے لیے باہر نکلنے والے نہتے لوگوں پر لاٹھی چارج کیا اورآنسو گیاس شل برسائے۔امیرحلقہ تلنگانہ مولانا حامدمحمدخان نے تلنگانہ کے وزیر اعلیٰ جناب کے.چندرشیکھرراؤ سے اپیل کی ہے کہ فوری طور پر خاطیوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے اور فوری طور پر امن بحال کیاجائے۔ساتھ ہی زخمیوں کے بہترعلاج کے لیے ایکس گریشیاجاری کرے اوراملاک کے نقصان کی پابجائی بھی کرے اور آئندہ اس طرح کے واقعات کوروکنے کے لیے عملی اقدامات کرے۔

 

Post source : Press release