April 01, 2020

واہ رے انسانیت – ہارٹ اٹیک سے بازار میں فوت ہونے والے کے پاس جانے کی کوئی ہمت نہیں کی – کریم نگر میں افسوسناک واقعہ

واہ رے انسانیت – ہارٹ اٹیک سے بازار میں فوت ہونے والے کے پاس جانے کی کوئی ہمت نہیں کی – کریم نگر میں افسوسناک واقعہ

کریم نگر -25 مارچ ( اردو لیکس)  تلنگانہ کے کریم نگر شہر میں ترکاری خریدنے کے لئے آنے والے ایک شخص کی ہارٹ اٹیک سے موت ہوگئی اور سڑک پر ہی وہ ڈھیر ہوگیا لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ کورونا وائرس کے خوف سے کوئی بھی فرد نعش کے پاس جاکر اس کا اتہ پتہ معلوم کرنے کی کوشش نہیں کی ۔مقامی افراد نے شبہ ظاہر کیا کہ موذی مرض کورونا کے نتیجہ میں اس کی موت ہوئی ہے اور اگر وہ اس کے پاس جائیں گے تو وہ بھی اس مرض سے متاثر ہوجائیں گےکافی دیر تک وینکٹیش نامی شخص کی نعش بازار کے سڑک پر پڑی رہی اور پولیس نے محکمہ صحت اور بلدیہ کے عملہ کے تعاون سے نعش کو ہاسپٹل کے مردہ خانے کو منتقل کیا اور اس کی شناخت کی گئی ۔بتایا گیا ہے کہ کریم نگر کے بھگت نگر سے تعلق رکھنے والا کے وینکٹیش آج ترکاری خریدنے کے لئے کشمیرگڈہ کے رعیتو بازار آیا تھا جہاں اسے اچانک ہارٹ اٹیک آگیا اور رعیتو بازار کے سامنے کی سڑک پر ہی تڑپتے تڑپتے اس کی موت ہوگئی لیکن اس کے پاس جانے کی کوئی ہمت نہیں کی ۔جبکہ بازار میں ترکاری خریدنے کے لئے کافی افراد جمع تھے معلوم ہوا ہے کہ وینکٹیش سائی اسٹیل ایجنسی کا ملازم تھا پولیس نے اس کے رشتہ داروں کو اس کی موت کی اطلاع دی ۔

Post source : Urduleaks