June 03, 2020

تبلیغی جماعت کے خلاف مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کا سنسنی خیز بیان

تبلیغی جماعت کے خلاف مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کا سنسنی خیز بیان

نئی دہلی -1 اپریل ( اردو لیکس) مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور مختار عباس نقوی نے دہلی کے نظام الدین میں تبلیغ جماعت اجتماع پر سنسنی خیز بیان دیا ہے، جو ملک میں کورونا وائرس پھیلنے کی وجہ بتائی جا رہی ہے۔مرکزی وزیر نقوی نے کہا کہ جب ملک میں کورونا وائرس پھیل رہا تھا تو 13 سے 15 مارچ تک دہلی کے نظام الدین علاقے میں تبلیغ جماعت نے اجلاس منعقد کیا ۔تبلیغی جماعت کا یہ عمل طالبان کے جرم سے کم نہیں ۔انھوں نے حکومت سے خواہش کی کہ وہ تبلیغی جماعت کے خلاف سخت کارروائی کرے۔ وزیر نے کہا کہ اقلیتوں کے ساتھ  ملک بھر کی عوام کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے مرکزی حکومت کی کوششوں کی حمایت کر رہے ہیں۔مرکزی وزیر مختار عباس نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے خلاف شروع کی گئی جنگ کے دوران تبلیغ جماعت کی جانب سے اجلاس منعقد کرنا ایک جرم ہے اسے قانون ہی نہیں بلکہ  اللہ تعالی بھی  معاف نہیں کرتا ۔ مرکزی وزیر نے کہا ان کی لاپرواہی کی وجہ سے کئی انسانوں کی جان خطرہ میں پڑ گئی ہے کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لئے تمام مسلمان رضاکارانہ طور پر جمعہ کے دن  مسجد میں با جماعت نماز ادا نہیں کررہے ہیں ایسے حالات میں تبلیغی جماعت کا اجلاس کیوں ملتوی نہیں کیا گیا؟

Post source : Urduleaks