August 04, 2020

ہندوستان میں کورونا ویکسین کے لئے کرنا پڑے گا مزید ایک سال انتظار!

ہندوستان میں کورونا ویکسین کے لئے کرنا پڑے گا مزید ایک سال انتظار!

نئی دہلی-6 جولائی ( اردو لیکس) ہندوستانی سائنسدان سومیا سوامی ناتھن نے کہا ہے کہ 2021 سے قبل ملک میں کورونا ویکسین آنے کا امکان نہیں ہے۔ مرکزی حکومت نے ہندوستانی میڈیکل ریسرچ کونسل (آئی سی ایم آر) کے کوویڈ 19 ویکسین کو 15 اگست تک متعارف کروانے کے اعلان کے پس منظر میں سوامی ناتھن نے اپنے رد عمل کا اظہار کیا ہے۔  سومیا سوامیاتھن جو ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی چیف ساینسٹیسٹ بھی ہیں نے کہا کہ ویکسین کے ٹرائلز کو مکمل ہونے میں کم از کم 6سے 9 ماہ لگیں گے۔ کواگین ، زیوکوف ڈی کے علاوہ کوئی بھی ویکسین جو فی الحال کورونا کا علاج کے لئے تیار کیا جا رہا ہے اس کا 2021 سے پہلے دستیاب ہونے کا امکان نہیں ہے۔ کوویڈ ۔19 ویکسین پر6 ہندوستانی دوا ساز کمپنیاں سخت محنت کر رہی ہیں۔ دنیا بھر میں 140 سے زیادہ ویکسین تیار ہورہے ہیں۔ ان میں سے 11 ویکسین انسانوں پر تجربے کے مرحلے میں پہنچ چکی ہیں۔ تاہم ، وزارت سائنس اور ٹکنالوجی کے ایک بیان کے مطابق ، 2021 سے قبل کوئی ویکسین دستیاب نہیں ہونے کی امید ہے۔ مرکزی وزارت سائنس کے مطابق ، موجودہ حالات میں ، کورونا ویکسین 2021 سے پہلے تیار ہونے کا امکان نہیں ہے۔ اس کی وجوہات کو بھی بیان کیا گیا ہے اس بیماری پر قابو پانے کے لئے ویکسین کا تجربہ تین مرحلوں میں ہوتا ہے۔ پہلے دو مراحل میں ویکسین محفوظ ہے یا نہیں ؟ اس کا جائزہ لیا جائے گا ۔ تیسرے مرحلے میں ویکسین کی افادیت کی جانچ کی جائے گی۔ ہر مرحلے میں کئی مہینوں سے سال لگ سکتے ہیں۔  حیدرآباد میں تیار ہونے والی بھارت بائیوٹیک کی ویکسین اور زائڈس کی تیار کردہ زائکوف ڈی-ایکس ویکسین کو پہلے دو مرحلے کے تجربے کی اجازت دی گئی۔ ویکسین کے مکمل طور پر جانچ پڑتال میں کئی مہینے لگ سکتے ہیں۔ اسی لئے مرکز کا کہنا ہے کہ یہ ویکسین 2021 سے پہلے نہیں آسکتی ہے۔

Post source : Urduleaks