September 29, 2020

دہلی پولیس اپنے دامن کے داغ بے قصور سماجی کاکنان کے دامن پر لگانے میں مصروف

دہلی پولیس اپنے دامن کے داغ بے قصور سماجی کاکنان کے دامن پر لگانے میں مصروف

14 ستمبر(پریس نوٹ)مرکزی حکومت اور دہلی پولیس کی ملی بھگت کا نتیجہ تھا دہلی فساد اگر دہلی پولیس نے ایماندارانہ کردار ادا کیا ہوتا تو دہلی فساد ہوتا ہی نہیں۔ جناب سراج طالب صدردہلی ویلفیئر پارٹی آف انڈیا نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ سیکڑوں گھر نذر آتش ہونے کے بعد اور53 جانیں جانے کے بعدجس طبقے کے خلاف فساد کی سازش کی گئی تھی اسی طبقہ کے لوگوں کی گرفتاریاں پے در پے چل رہی ہیں، تمام شواہدات کے باوجود کپل مشرا پر کوئی کاروائی نہیں کی گئی۔پچھلی رات جے این یو کے سابق طلبہ لیڈرڈاکٹر عمر خالد کی گرفتاری بھی اسی سمت میں اشارہ کر رہی ہے کہ جس طرح خالد سیفی،میران حیدر، آصف اقبال تنہا وغیرہ کو بے قصور گرفتار کر کے الزام مڑھ دیئے گئے ہیں اسی طرح عمر خالد کو بھی نشانہ بنایا گیا ہے جبکہ عمر خالد گاندھی اور امیڈکر کی آئیڈیا لوجی کو فولو کر تے ہیں۔ویلفیئر پارٹی آف انڈیا ڈاکٹر عمر خالد کی گرفتاری کی پر زور مذمت کر تی ہے او اس ظلم کے خلاف آواز بلند کر نے کا اعلان کرتی ہے۔