December 06, 2020

یوپی حکومت کا حلفنامہ بے قصور افراد کی آزادی میں مداخلت کی ناپاک کوشش: پاپولر فرنٹ

دہلی 22 نومبر (پریس نوٹ) پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے قومی سکریٹری محمد ثاقب نے کہا کہ یوپی حکومت کا حلفنامہ بے قصور لوگوں کی آزادی میں مداخلت کی ناپاک کوشش ہے۔

صدیق کاپن کی ضمانت کی عرضی کے خلاف یوپی حکومت کا حلفنانہ یہ ظاہر کرتا ہے کہ کس طرح سے یوپی حکومت بے قصوروں کو پھنساتی ہے اور انہیں سلاخوں کے پیچھے رکھنے کے لئے کس حد تک جا سکتی ہے۔ اس کا یہ دعویٰ کہ کاپن پاپولر فرنٹ کا آفس سکریٹری تھا بالکل سفید جھوٹ ہے۔ وہ پاپولر فرنٹ کے کسی بھی آفس میں کبھی سکریٹری نہیں رہا۔ بالفرض اگر ان کا دعویٰ صحیح بھی ہو تو بھی اس سے بے قصوروں کے خلاف یوپی پولیس کی کاروائی اور ان پر یو اے پی اے لگانے کو درست نہیں ٹھہرایا جا سکتا۔ پاپولر فرنٹ یا کسی دوسری قانونی طور سے سرگرم عمل تنظیم کا آفس سکریٹری ہونا، پاپولر فرنٹ کے ممبران کے ہمراہ یوپی کا سفر کرنا اور عصمت دری کی متاثرہ کے اہل خانہ سے ملاقات کرنا یہ سب کسی شہری کو اس کے بنیادی حقوق سے محروم کرنے کے اسباب نہیں ہو سکتے۔ ان معصوموں کے ساتھ یوپی حکومت جو کچھ کر رہی ہے اگر اسے آگے بھی ہونے دیا گیا، تو یہ ملک حقوق انسانی کا قبرستان بن جائے گا۔

پاپولر فرنٹ یہ امید کرتی ہے کہ عدالت ان جھوٹی باتوں کے فریب نہیں آئے گی اور بے قصوروں اور جمہوری مخالفت کے خلاف یوپی حکومت کے ذریعہ اقتدار کے غلط استعمال کو ختم کرے گی۔