جنرل نیوز

ڈاکٹر کفیل خان کی کتاب "The Gorakhpur Hospital Tragedy” کی رسمِ اجرائی

ہندوستان کے مشہور ڈاکٹر جناب کفیل خان صاحب کی کتاب "The Gorakhpur Hospital Tragedy” کی رسمِ اجرا

جھارکھنڈ سوابھیمان منچ کے ذریعے ہندوستان کے مشہور کالم نگار حافظ محمد ہاشم قادری صدیقی مصباحی وکاشف صدیقی واڈاکٹر کفیل خان کے ذریعے 7 جنوری ہوٹل آ ل سیشسن آم بگان ساکچی جمشید پور کے ہاتھوں ہوئی پریس کانفرنس میں ڈاکٹر صاحب نے اپنی کتاب پر پوچھے گئے سوالات کا جواب دیا ملک کے مشہور ودانشور حضرات نے شامل ہوئے کاشف صدیقی جمشید پور نے اس کی اطلاع دی۔

ڈاکٹر کفیل خان کے بارے 

اترپردیش کے گورکھ پور کے ایک متوسط خاندان میں پیدا ہونے والے ڈاکٹر کفیل گورکھ پور کے بی آر ڈی ہاسپٹل میں بچوں کے ڈاکٹر تھے۔

ڈاکٹر کفیل خان اس وفت سرخیوں میں آئے جب ستمبر 2017 میں اترپردیش کے شہر گورکھ پور کے سرکاری بی آر ڈی ہسپتال میں مبینہ طور پر آکسیجین کی کمی کی وجہ سے ہلاک ہو گئے تھے۔حکومت نےانہیں وہاں سے برخاست کر دیا اور ان پر لاپرواہی کا الزام میں گرفتارکیا اور تقریباً آٹھ ماہ جیل میں گزارنے کے بعد انہیں اپریل 2018 میں رہا کر دیا گیا۔ اور ریاستی حکومت کی جانب سے بھی انہیں ‘کلین چٹ’ گئی تھی۔

 

اترپردیش کی حکومت کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر کفیل کی لاپرواہی کی وجہ سے بچوں کی ہلاکتیں ہوئی لیکن ڈاکٹر کفیل کا الزام ہے کہ حکومت کی جانب سے گیس سپلائی کرنے والوں کے بل نہ ادا ہونے کی وجہ سے بچوں کی ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ بعض میڈیا نے بی آر ڈی کالج میں معصوم بچوں کی جان بچانے کے لیے ڈاکٹر کفیل کی کوششوں کی وجہ سے انہیں’ہیرو’ بتایا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button