سوشل میڈیا پر اب کڑی نظر _ مرکز کے نئے گائیڈ لائنس جاری

نئی دہلی _25 فروری (اردولیکس) مرکزی حکومت نے سوشل میڈیا جیسے ٹویٹر ، واٹس ایپ اور فیس بک پر آنے والے پوسٹوں کو قابو کرنے کی اپنی حکمت عملی کے تحت کے لئے نئے گائیڈ لائنس جاری کی ہیں۔ مرکزی حکومت نے ٹیک کمپنیوں پر غلبہ حاصل کرنے کے لئے ایک نیا ڈیجیٹل فریم ورک تیار کیا ہے۔ مرکز نے انٹرنیٹ پر مبنی ، او ٹی ٹی پلیٹ فارم کے لئے بھی نئے گائیڈ لائن جاری کردیئے ہیں۔ مرکزی وزیر آئی ٹی  روی شنکر پرساد نے کہا کہ سوشل میڈیا کے غلط استعمال پر وسیع پیمانے پر تبادلہ خیال ہوا ہے۔ 25 فروری کو جاری انفارمیشن ٹکنالوجی (انٹرمیڈیری گائیڈ لائنز اور ڈیجیٹل میڈیا اتھیکس کوڈ) 2021 قواعد کے مطابق ، حکومت یا قانونی احکامات کے بعد جلد سے جلد قابل اعتراض مواد کو ہٹا دینا ضروری ہوگا۔وزیر روی شنکر نے کہا کہ سوشل میڈیا کمپنیوں کو عدالت یا حکومت کے حکم  کے مطابق نامناسب تبصرے یا ٹویٹ  کرنے والوں کی تمام تفصیلات جاری کرنا ہوگا۔ وزیر نے کہا کہ ان اقدامات کا مقصد ملک کی سالمیت ، سلامتی ، خارجہ پالیسی ،کو برقرار رکھنا فحش مواد کو فروغ دینے سے روکنا ہے۔

وزیر موصوف نے یہ بھی کہا کہ سوشل میڈیا کے غلط استعمال کے لئے ایک شکایت کے ازالے کا طریقہ کار وضع کیا جارہا ہے۔ وزیر روی شنکر نے بتایا کہ شکایتی افسر کی جانب سے 24 گھنٹوں کے اندر معاملہ درج کرلیا جائے گا اور 15 دن میں معاملہ حل ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر کوئی ایسی تصاویر اپ لوڈ کی  جن میں خواتین کو غلط انداز میں پیش کیا گیا ہو تو ، ان تصاویر اور پیغامات کو ان کی شکایت کے 24 گھنٹوں کے اندر حذف کردینا چاہئے