تلنگانہ میں ایک سرپنچ 13 لاکھ روپے رشوت لیتے ہوئے پکڑا گیا

وقارآباد _ 5 مارچ ( اردولیکس) تلنگانہ میں ایک گرام پنچایت کے سرپنچ کو اینٹی کرپشن بیورو کے عہدیداروں نے رشوت قبول کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔یہ واقعہ وقارآباد ضلع پوڈور منڈل کے منے گوڈہ  گاؤں کا ہے جہاں منے گوڑہ کے سرپنچ ونود گوڈ نے محمد ساجد پاشاہ رشوت کی رقم قبول کرتے ہوئے پکڑا گیا۔بتایا گیا ہے کہ ساجد پاشاہ نے منے گوڑہ میں ایک زمین پر عمارت تعمیر کرنے کے لئے درخواست دی تھی اور گرام پنچایت نے اس کی منظوری بھی دی ۔لیکن  سرپنچ ونود گوڈ نے تعمیراتی اجازت نامے کے لئے 20 لاکھ روپئے کا مطالبہ کیا اور 13 لاکھ روپے میں بات طے ہوئی  ۔ ساجد پاشاہ نے اے سی بی حکام کو اس معاملے کے بارے میں اطلاع دی ۔ شہر بنڈلہ گوڑہ کے پاس ونود گوڑ کو رقم لیتے ہوئے اے سی بی کے عہدیداروں نے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا ۔اس معاملے میں منے گوڑہ گرام پنچایت سکریٹری مانکیم سے بھی پوچھ گچھ کی گئی۔ ونود گوڑ کو تحویل میں لے لیا گیا۔