جمعیتہ علماء عادل آباد کی مولانا محمد مصدق القاسمی کی نگرانی میں جدید باڈی کی تشکیل – حافظ ابوبکر حامد ضلع صدر منتخب

 

عادل آباد8/مارچ(اردو لیکس)حضرت مولانا مصدق القاسمی ریاستی مبصر جمعیۃ علماء ہند آج عادل آباد کا دورہ کرتے ہوئے ریاست تلنگانہ کے تحت جمعیۃ علماء عادل آباد یونٹ کی ضلعی باڈی کی تشکیل عمل میں لائی گئی۔اس سلسلہ میں جمعیت کے دفتر واقع کولی پورہ میں ایک اجلاس کا انعقاد عمل میں لایا گیا۔اجلاس میں ضلع کے منڈل جات اور شہر مستقر کے علماء و حفاظ نے شرکت کی۔اور تمام کی اتفاق رائے سے حافظ ابوبکر حامد کو ضلع صدر منتخب کیا گیا۔جبکہ نائب صدور کی حیثیت سے مفتی محمد مصطفی مظاہری،مولانا رحیم ذاکر کا انتخاب عمل میں آیا۔مولانا اسلم ندوی کو جنرل سکریٹری اور مولانا سید رضوان اسعدی کو جوائنٹ سیکریٹری اور اسی طرح جناب حافظ عبدالجبار کو بحیثیت خازن منتخب کیا گیا۔بعد ازاں میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے جمعیت کے ریاستی مبصر مولانا مصدق القاسمی نے اجلاس کی تمام تفصیلات سے واقف کروایا۔انہوں نے کہا کہ جمعیتہ علماء ہند اپنی سو سالہ تاریخ رکھتی ہے۔جمعیت پورے ملک کی پاسبانی کا کام کرتی آرہی ہے۔جمعیتہ علماء آزادی سے لے کر آج تک ملی،رفاہی،سماجی مختلف خدمات میں اپنا ایک سنہرا نام رکھتی ہے۔اللہ تعالی نے بہت سے نیک کاموں کو کرنے کے احکامات نازل فرمائے ہیں۔ان میں حقوق اللہ کے ساتھ حقوق العباد کو خاص اہمیت دیگئی ہے۔حقوق العباد میں مخلوق کی خدمت کرنا بہت بڑے اجر کا حامل ہے۔خدمت کے بہت سے کام تنظیمی طور پر ہوتے ہیں۔جو بہت زیادہ موثر ہوتے ہیں۔مولانا مصدق القاسمی نے مزید کہا کہ جمعیتہ علماء ہند قدیم جماعت ہے۔جسکا قیام 1919ء نومبر میں جنگ آزادی کے درمیان عمل میں آیا۔جمعیت نے امت کے نونہالوں اور نسلوں کی حفاظت کا کام کیا ہے۔نسلوں کی حفاظت کے لئے دینی تعلیم کا رسالہ نکالا گیا۔تاکہ امت کے ایمان کی حفاظت کی جاسکے۔انہوں نے جمعیت کے ابتدائی قیام اور جنگ آزادی کے وقت کے مختلف پہلوؤں پر روشنی ڈالی۔مولانا نے ضلعی باڈی کی تشکیل کے بعد نومنتخب ذمہ داران کو باہمی مشوروں سے جمعیت کے تحت کیے جانے والے کاموں کو بحسن و خوبی انجام دینے کی ہدایت۔مولانا کی دعا پر اجلاس کا اختتام عمل میں آیا۔اخیر میں عادل آباد ٹاؤن باڈی کو بھی آپسی مشورے سے منتخب کرنے کا مشورہ دیا۔اور تمام کی خدمات کی ستائش کرتے ہوئے نو منتخب ذمہ داران کو مبارکباد دی۔اس موقع پر جمعیت کے ذمہ داران حافظ ابوبکر حامد،مفتی محمد مصطفی مظاہری،مولانا اسلم نہدی،مو لانا رحیم ذاکر،مولانا اسلم ندوی،حافظ عبدالجبار،مولانا سید رضوان کے علاوہ حافظ عبدالاحد،مولانا اکبر الدین حسامی،مولانا محمد قمر،مولانا ابوذر صران،حافظ حسین،مفتی عثمان قاسمی،مولانا فیروز،مولانا کلیم قاسمی،مولانا شمیم،مفتی ناصر نہدی،مولانا ابوذر حامد،مفتی مذکر قاسمی،حافظ کاظم مصباحی،مولانا سید مبشر رشیدی،حافظ امجد خان،حافظ و مولوی علی،حافظ شعیب فیصل اور دیگر علماء و حفاظ موجود تھے۔