جنرل نیوز

بھینسہ کی عوام سے پرامن رہنے جمیعتہ علماء مدہول کی اپیل


مدہول( پریس نوٹ )امن و آمان ایک ترقی پسند سماج کی علامت ہوتی ہے بھائی چارہ اور گنگاجمنی تہذیب ہندوستان کی پہچان ہے ان خیالات اظہارحافظ عبدالقوی صدرجمیعتہ علماء مدہول ومفتی محمد رئیس الدین قاسمی جرنل سیکریٹری مدہول نے اپنے مشترکہ بیان کیا انھوں نے بھینسہ میں پیش آئے فرقہ وارانہ فساد پر گھرے دکھ کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ بھینسہ بڑی تیزی کے ساتھ ترقی کی راہ پر گامزن ہے وہاں کڑوں کے ترقیاتی کام ہرطبقے کیلئے ہورہے ہیں معمولی معمولی واقعات فرقہ واریت کاروپ اختیارکرلے یہ تلنگانہ بالخصوص بھینسہ جیسے شہر کے لئے کسی صورت سودمند نہیں، جمیعتہ علماء مدہول ،بھینسہ کی دونوں طبقہ کی عوام سے پردرداپیل کرتی ہے کہ وہ فرقہ پرستی کی آگ میں بالکل نہ جھلسے فرقہ پرستی ملک کے لئے کینسر سے بھی زیادہ خطرناک ہے اس کاخاتمہ دونوں طرف کی سنجیدہ عوام کی پہل سے بہت جلد ممکن ہے جمیعتہ علماء مدہول پولس سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ برقراری امن میں کوئی کسرباقی نہ چھوڑے بے گناہوں کو ہاتھ بھی نہ لگائے اور خاطی کو کیفر کردارتک پہنچائے بغیر چین کی سانس نہ لے فرقہ واریت کی آگ لگانے والوں کو چاہئے وہ کتناہی سیاسی اثرورسوخ کامالک کیوں نہ ہو اسے بخشانہ جائےنیز تلنگانہ حکومت سے مطالبہ ہے کہ وہ زخمیوں کا بہتر سے بہتر علاج کرائے اور عوام کاجومالی نقصان ہواہے اس کی بھرپائی کرے اور اس طرح کے واقعات کا اعادہ نہ ہو اسکاانتظام کرے

متعلقہ خبریں

Back to top button