انٹر نیشنل

آنگ سانگ سوچی پرلاکھوں ڈالراورسونا بطوررشوت قبول کرنے کا فوج نے لگایا الزام

نئی دہلی _ 12 مارچ ( اردولیکس) میانمار کے فوجی حکمرانوں نے آنگ سان سوچی کے خلاف اب تک کے سب سے سنگین الزامات عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے 6لاکھ ڈالر اور 11 کلو گرام سونا غیر قانونی طور پر لیا ہے۔ جبکہ سوچی کی پارٹی نے اس الزام کی تردید کی ہے۔ جنٹا کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل جا من من تنگ نے کہا ہے کہ سوچی کے خلاف الزامات ینگون کے سابق وزیر اعلی فیو میاں تھیین نے لگائے تھے ، جنھوں نے انہیں پیسے دیئے تھے۔ انہوں نے میانمار کے معزول صدر ون مائنٹ اور کابینہ کے متعدد وزرا پر بھی بدعنوانی کا الزام عائد کیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button