اسپشل اسٹوری

ایک نہیں، دو نہیں۔۔پورے 18 نوجوانوں سے شادی کرتے ہوئے ایک نوجوان خاتون نے۔۔۔۔۔۔

حیدرآباد _ 21مارچ( اردولیکس) ایک نہیں، دو نہیں بلکہ 18 شادیاں کرتے ہوئے دلہے کے گھر سے زیورات اور نقد رقم لے کر فرار ہونے والی خاتون کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔یہ واقعہ راجستھان کا ہے راجستھان پولیس نے 18 نوجوانوں سے شادی کرنے اور پھر زیورات اور نقدی چوری کرنے کے الزام میں بھگوتی عرف انجلی نامی نوجوان خاتون کو گرفتار کیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ اس نوجوان خاتون  کا تعلق تلنگانہ یا آندھراپردیش ریاستوں سے ہے کیونکہ وہ تلگو اچھی طرح بول سکتی ہے پولیس نے خاتون کے ساتھ پانچ دیگر افراد کو جوناگڑھ میں پکڑ لیا ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس گینگ نے گجرات ، مدھیہ پردیش اور راجستھان میں بہت سے لوگوں کو دھوکہ دیا ہے۔ جوناگڑھ کے ایک نوجوان کی شکایت کے بعد انہیں رنگے ہاتھوں پکڑ لیا گیا۔ تفتیش میں انکشاف ہوا ہے کہ وہ  جعلی دستاویزات کے ذریعے گجرات میں مقیم تھے ۔ ان کا کام نوجوانوں سے شادی کرنا ہے اور پھر ان کے پاس موجود زیورات اور نقدی لے کر فرار ہوجانا ہے۔ انجلی نے جوناگڑھ کے علاقے امبلیا گاؤں کے ایک نوجوان سے شادی کی اور زیورات سمیت 3 لاکھ روپے لے کر فرار ہوگئی۔ جب نوجوان نے پولیس سے شکایت کی تو .. سارا معاملہ سامنے آیا۔ پولیس کو اطلاع ملی کہ ملزمہ گجرات کے راجکوٹ کے علاقے میں موجود ہے فوری اسے پکڑ لیا گیا۔انجلی اور اس کی والدہ دھنوبین کو پولیس نے گرفتار کیا اور ان سے تفتیش کی  جارہی ہے 

متعلقہ خبریں

Back to top button