نیشنل

اذان کے بعد برقعہ پر پابندی عائد کرنے اترپردیش کے وزیر کا متنازعہ بیان

لکھنو_25 مارچ ( اردولیکس) اترپردیش کے مسلم مخالف وزیرآنند  شکلا نے اذان پر اعتراض کے بعد  مسلم خواتین کے  ‘برقعہ’ پر متنازعہ بیان دیا ہے انہوں نے کہا کہ مسلم خواتین کو برقعہ سے آزاد کروانے کی ضرورت ہے انہوں نے برقعہ کو شیطانی روایت قراردیتے ہوئے کہا کہ جس طرح تین طلاق سے مسلم خواتین کو آزاد کروایا گیا ہے اسی طرح برقعہ سے بھی آزاد کروایا جائے گا ۔انھوں نے کہا کہ کئی ممالک نے برقعہ پر پابندی عائد کی ہے متنازعہ وزیر آنند شکلا نے دو  دن قبل ہی ضلع مجسٹریٹ کومکتوب روآنہ کرتے ہوئے شکایت کی کہ وہ مساجد میں لاؤڈ اسپیکرس سے مشکلات کا سامنا کررہے ہیں اور اپنے خدمات ادا کرنے قاصر ہیں ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button