بھائی بہن کے رشتہ کو شرمسار کرنے والا حیوانیت کا تلنگانہ میں واقعہ

حیدررآباد_ 7 اپریل ( اردولیکس) تلنگانہ میں بھائی بہن کے رشتہ کو شرمسار کرنے والا حیوانیت کا واقعہ پیش آیا۔جس کو سننے اور پڑھنے کے بعد رونگھٹے کھڑے ہوجائیں گے۔یہ واقعہ تلنگانہ کے کتہ گوڑم ٹاون کا ہے جہاں ایک یتیم لڑکی کو اس کے ہی سگے بھائی اور تایا زاد بھائی نے کئی سالوں تک جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ پچھلے کچھ مہینوں سے بھائیوں کی جنسی زیادتی میں اضافہ سے تنگ بہن نے پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی۔اس واقعہ کا  لڑکی کی ماں ،تایا اور تائی  کو علم تھا لیکن وہ لوگ بھی ان درندوں کا ساتھ دے رہے تھے اور پولیس میں شکایت درج کروانے کی دھمکی پر جان سے مارنے کی دھمکیاں دے رہے تھے ۔لڑکی نے بتایا کہ جس وقت وہ نویں جماعت میں تھی اس وقت سے ہی اس کا بڑا بھائی اسے جنسی زیادتی کا شکار بنانا شروع کیا۔بھائی کی جنسی زیادتی سے تنگ آکر اس نے تایا کے گھر چلی گئی لیکن وہاں بھی اس کے تایا زاد بھائی نے اس کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا۔یہ سلسلہ گزشتہ تین سال سے جاری تھا بالآخر لڑکی نے تنگ آکر کتہ گوڑم تھری ٹاون پولیس اسٹیشن میں دونوں بھائیوں، ماں، تایا اور تائی کے خلاف شکایت درج کروائی۔اور میڈیا کے سامنے رجوع ہوتے ہوئے تفصیلات پیش کی۔ پولیس نے مقدمہ درج کرلیا ہے اور تفتیش کررہی ہے۔ تاہم ، اس اندوہناک واقعہ کے منظر عام پر آنے کے بعد ، تایا زاد بھائی  جس نے لڑکی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا  تھا ، نے گھر میں پھانسی لے کر خودکشی کرلی۔