نیشنل

شادی شدہ عورت کا غیر مرد کے ساتھ رہنا غیر قانونی: راجستھان ہائی کورٹ

جئے پور _ راجستھان ہائی کورٹ نے  کہا ہے کہ شادی شدہ عورت کا دوسرے مرد کے ساتھ رہنا غیر قانونی ہے۔ جسٹس ستیش کمار شرما پر مشتمل ایک رکنی بنچ نے یہ  فیصلہ سنایا۔ عدالت نے اس جوڑے کی جانب سے پولیس تحفظ کی درخواست کو بھی مسترد کردیا۔ جج نے فیصلہ دیا کہ وہ تحفظ کے حقدار نہیں ہیں۔

خاتون  پہلے سے شادی شدہ ہے اور اب تک طلاق نہ ہونے کے تناظر میں کسی دوسرے مرد کے ساتھ رہنا ناجائز تعلقات کے تحت آتا ہے۔ جج نے کہا ا کہ جو لوگ ڈیٹنگ کر رہے ہیں انہیں پولیس کا تحفظ فراہم کرنا بالواسطہ طور پر ایسے تعلقات کی اجازت دینے کے مترادف ہوگا ۔ تاہم درخواست گزاروں کو ہدایت دی کہ اگر انھیں کسی نے  حملہ کیا تو پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائیں۔

اس کیس کی تفصیلات کچھ اس طرح ہی۶راجستھان کے ضلع جھنجونو سے تعلق رکھنے والی ایک 30 سالہ خاتون ، 27 سالہ غیر مرد کے  ساتھ رہ رہی ہے ۔ تاہم عورت پہلے ہی قانونی طور پر دوسرے مرد سے شادی کی تھی۔لیکن شوہر اور سسرال والوں پر ہراسانی کا الزام عائد کرتے ہوئے وہ ایک نوجوان کے ساتھ الگ رہ رہی ہے ۔ اس جوڑے نے پولیس تحفظ کے لیے عدالت سے اس معاملہ کو رجوع کیا کیونکہ ان کی جان کو خطرہ ہے۔ مقدمے کی سماعت کے دوران خاتون کے شوہر اور اس کے گھر والوں نے یہ  الزام لگایا کہ جوڑے کے درمیان ناجئز تعلقات  ہیں۔

 

متعلقہ خبریں

Back to top button