ممبی- احمدآباد بلٹ ٹرین پراجکٹ پر 10 ہزار کروڑ کے مصارف

،ممبئی اور احمدآباد کے درمیان انتہائی تیز رفتار ریل پروجیکٹ کو حکومت جاپان کی تکنیکی اور مالی امداد کے ساتھ منظوری دی گئی ہے۔ ممبئی –احمدآباد ہائی اسپیڈ ریل راہداری پروجیکٹ کو نافذ کرنے کیلئے نیشنل ہائی اسپیڈ ریل کارپوریشن لمیٹڈ (این ایچ ایس آر سی) نامی کمپنی فروری 2016 میں تشکیل دی گئی۔ 

 

جاپان کی بین الاقومی تعاون ایجنسی (جے آئی سی اے) کے ایک مطالعے میں سفارش کی گئی ہے کہ اس راہداری کا 65 فیصد حصہ پشتوں پر تعمیر کیا جائے گا، 28 فیصد حصہ پلیوں اور پلوں پر مشتمل ہوگا جب کہ 6 فیصد راستہ سرنگ سے گزرے گا اور ایک فیصد کٹنگ پر تعمیر کیا جائے گا۔ البتہ سطح سے اوپر (ایلیویٹڈ) راہداری کے بارے میں فیصلہ تکنیکی طور پر قابل عمل ہونے اور آراضی کی دستیابی پر منحصر ہوگا۔ جے آئی سی اے کے ابتدائی جائزے کے مطابق پوری طرح ایلیویٹڈ راہداری پر تقریبا 10 ہزار کروڑ روپے کی لاگت آئے گی۔

 

یہ معلومات آج راجیہ سبھا میں ریلوے کے وزیر مملکت جناب راجن گوہین نے ایک تحریری سوال کا جواب دیتے ہوئے دی۔