جنرل نیوز

دہلی میں رکن پارلیمنٹ صدر مجلس بیرسٹر اسدالدین اویسی کی قیام گاہ پر اشرار کا حملہ باعث افسوس  

 

 

اوٹکور:(اردو لیکس۔محمد وسیم) ناراٸن پیٹ ضلع کے اوٹکور منڈل مستقر پر مجلس ٹاٶن صدر و کونسلر محمد اسماعیل نے ہندوستان کی قومی دارالحکومت نٸی دہلی میں گذشتہ روز رکن پارلیمنٹ و صدرکل ہند مجلس اتحادالمسلمین الحاج بیرسٹر اسدالدین اویسی کی سرکاری قیام گاہ پر ہندو سینا کے چند شرپسند عناصر نے حملہ کرنے پر غم و غصہ کا اظہار کرتے ہوٸے شدید مذمت کی۔انہوں نے کہا کہ اس حملہ میں جس میں نام کی تختی،گیٹ،کھڑکیوں،اور شیشوں کو لاٹھی،کلہاڑی اور پتھروں سے نقصان پہنچایا شرپسند عناصر نے اس وقت اشتعال انگیز نعرے لگاتے ہوٸے ”اویسی باہر آٶ“چیخ رہے تھے۔موصوف نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوٸے کہا کہ ایک ایم پی کی سرکاری قیام گاہ پر یہ حملہ ہوا تو  اس ملک میں عام شہریوں کا کیا حال ہوگا۔جناب محمد اسماعیل نے مزید کہا کہ دن بہ دن ملک کے حالات بگڑ رہے ہیں انہوں نے مرکزی حکومت سے پرزور اپیل کی ہے کہ اس حملہ میں جتنے بھی شر پسند عناصر شامل ہیں ان تمام کو گرفتار کرکے سخت سے سخت سزا دی جاٸے تاکہ اس ملک میں آٸندہ ایسے ناگہانی حالات پیش نہ آٸے۔اس موقع پر اوٹکور منڈل مجلس یوتھ صدر  محمد مجاہد دیساٸی نے اس معاملہ کو افسوس ناک قرار دیتے ہوٸے کہا کہ ان خاطیوں کو کیفرکردار تک پہنوچایا جاٸے۔اس پریس کانفرنس میں مجلس اتحادالمسلمین کے سرگرم کارکن محمد مکرم بڑے پیر،محمد عمران اور فتح محمد کے علاوہ دیگر موجود تھے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button