حیدرآباد میں 26 نومبر کو معذورین کا ریاستی سطح کا جلسہ عام _ جلسہ کو کامیاب بنانے ناراٸن پیٹ ضلع VHPSصدر عبدالعزیز خان کی اپیل

اوٹکور : ناراٸن پیٹ ضلع کے VHPS صدر عبدالعزیز خان نے ایک صحافتی بیان میں کہا کہ اس مہینے کی 26 تاریخ کو ریاستی سطح پر ایک عظیم الشان پیمانے پر معذورین کا جلسہ عام کو کامیاب بنانے کی اپیل کی۔اور اس موقع پر انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے حل کیے جانے والے اہم مسائل معذوروں، بزرگوں اور بیواؤں کی پنشن کو بڑھا کر 1000 روپے کرنا ہے۔ 3,016/- 2.016/- سے روپے تک۔ 6,000/-۔ *محکمہ بہبود معذور افراد کو خود مختار رکھا جائے اور کوآپریٹو سوسائٹی کو مضبوط کیا جائے۔ ریاستی حکومت کو معذوری کے حقوق ایکٹ 2016 کو پوری طرح نافذ کرنا چاہیے۔ ریاست میں ہر اہل معذور کو ان کی اہلیت کی بنیاد پر سرکاری ملازمتوں میں موقع دیا جانا چاہیے۔ معذوروں کے ساتھ کوآپریٹو سوسائٹی کے ملازمین کو 2009، 2014، 2021 کے پی آر اور تلنگانہ الاؤنس دوسرے سرکاری ملازمین کی طرح فراہم کیے جائیں۔ . اسی تناظر میں محکمہ بہبود کو خودمختار رکھا جائے گا اور کوآپریٹو سوسائٹی کو بھرپور حد تک مضبوط کیا جائے گا۔ہم 26 تاریخ 2021 بروز جمعہ حیدرآباد کو کامیاب بنانے کی اپیل کر رہے ہیں۔ ان معذوروں/معذور خاندانوں میں سے ہر ایک کے لیے روپے۔ سیلف ایمپلائمنٹ کے تحت 15 لاکھ روپے سے کم کے قرضے منظور کیے جائیں۔ جسمانی طور پر معذور افراد کے لیے روسٹر پوائنٹ 56 کو تبدیل کر کے 10 کر دیا جائے۔ گاؤں، منڈل، ضلع، علاقائی، میونسپل، میٹروپولیٹن اور میونسپل انتخابات (بلدیاتی اداروں) میں 4% سیاسی ریزرویشن ہونا چاہیے۔ نامزد شریک اراکین کی تقرریوں میں معذوروں کو اولین ترجیح دی جانی چاہیے۔ * تلنگانہ کے ہر زونل ڈویژن میں، ضلعی مراکز اور شہروں، قصبوں میں مناسب مراکز کی نشاندہی کی جائے اور معذوروں کے لیے اہم سڑکیں اور عمارتیں تعمیر کی جائیں۔ شادی کا ترغیبی تحفہ روپے 5 لاکھ ریاست میں 18 سال سے زیادہ عمر کے معذور افراد کو موٹر گاڑی اور دیگر سامان فوری طور پر فراہم کیا جانا چاہیے۔ تلنگانہ کے تمام سرکاری ہاسٹلس اور سروس ہاؤسز کی اپنی عمارتیں تمام سہولیات کے ساتھ ہونی چاہئیں اور ان میں رہنے والے معذور افراد کے لیے ہر طرح کی سہولیات فراہم کی جانی چاہیے۔ ریاست کے تمام سرکاری محکموں اور بلدیاتی اداروں کے سالانہ بجٹ کا 5% معذوروں کے لیے مختص کرنا۔ ٹاسک فورس کمیٹی کی صدارت ضلعی سطح پر کلکٹر اور ریاستی سطح پر چیف سکریٹری کو کرنی چاہیے۔ ملازمتوں میں ترقیوں میں معذور ملازمین کے لیے 4% ریزرویشن کو فوری طور پر نافذ کیا جائے۔ . معذور ملازمین کو کسی بھی سال ریٹائر ہونے پر مکمل پنشن اور نقل مکانی کی سہولت کا حقدار ہونا چاہیے۔ وہ عالمی یوم معذوری 3 دسمبر ہے۔ لوئی بریل کے یوم پیدائش کو 4 جنوری کو تعطیل کا اعلان کیا جانا چاہیے۔ ڈس ایبلٹی کوآپریٹو سوسائٹی کی زمینوں کو کمرشل طور پر تیار کیا جائے اور بے روزگار معذوروں کو الاٹ کیا جائے۔ ڈبل بیڈ روم والے گھروں کو اولین ترجیح معذور خاندانوں کو دی جانی چاہیے۔ . * دیہی اور شہری علاقوں میں معذور افراد کے لیے آمدنی کی حد 8 اور 10 لاکھ تک بڑھا دیں۔ آمدنی کی حد سے قطع نظر تمام سرکاری اسکیموں میں متعدد معذور افراد کو ترجیح دی جانی چاہیے۔ معذوروں کی خدمت کرنے والی این جی اوز کو مفت سرکاری زمین مختص کریں، تعمیرات کے لیے مالی امداد فراہم کریں، اور مفت بجلی اور پینے کے پانی کی فراہمی کے ساتھ ساتھ تمام سرکاری ٹیکسوں سے مستثنیٰ ہوں۔