تلنگانہ

ضلع کلکٹر ہری چندنا نے ضلع میں 2021-22 کے ہریالی ہ ریتاہارم کے لیے 30 لاکھ کا ہدف مقرر کیا ہے

ضلع کلکٹر ہری چندنا نے ضلع میں 2021-22 کے ہریالی ہ ریتاہارم کے لیے 30 لاکھ کا ہدف مقرر کیا ہے

 

ناراٸن پیٹ: 08 دسمبر (اردو لیکس) نارائن پیٹ ضلع کلکٹر ہری چندنا نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ آنے والے سالوں میں 100 فیصد اہداف کو پورا کریں کیونکہ ریاستی حکومت نے 2020-21 کے مہتواکانکشی پروگرام کو کامیابی کے ساتھ مکمل کیا ہے۔ کلکٹریٹ کانفرنس ہال میں ضلعی محکمہ جنگلات کے زیراہتمام سال 2021-22-23 کے لیے ہریالی میں لگائے جانے والے پودوں کے محکمانہ اہداف کا تعین کیا گیا۔ نارائن پیٹ ضلع میں 2022 تک 30 لاکھ، 2023 تک 26 لاکھ اور 2024 تک 20 لاکھ پودے لگانے کا ہدف ہے۔ سال 2021 میں لگائے گئے کسی بھی پودے کو مرنے سے بچانے کا حکم دیا گیا تھا۔

 

قومی اور ریاستی شاہراہوں پر پودوں کی تین قطاریں لگانے کا مشورہ دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پھلوں کے پودے ہر اسکول میں لگائے جائیں اور نہروں کے کنارے پودے لگانے کے بہت مواقع ہیں۔ وہ ایسے پودے فراہم کرنا چاہتے ہیں جس سے کسانوں کو فائدہ پہنچے۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ دیہی فطرت کے ذخائر کی باقیات میں مکمل کرنے کی تجویز کی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ وسیع دیہی فطرت کے جنگلات میں پودے پورے پیمانے پر لگائے جاتے ہیں۔ بلدیات میں سڑک کے دونوں اطراف پودے لگانے کی تجویز دی گئی۔ یہ تجویز پیش کی گئی کہ گرام پنچایتوں کو سڑکوں کے ساتھ تین قطاروں میں پودے لگائے جائیں اور اب تک لگائے گئے پودوں کی حفاظت کرنا گرام پنچایتوں کی ذمہ داری ہے۔

 

حکام کو حکم دیا گیا کہ اگر کہیں بھی لگایا گیا پودا بدقسمتی سے مر جائے تو اسے فوری طور پر تبدیل کر دیا جائے۔ ہر پودے کے لیے ٹری گارڈ لگانے کی سفارش کی گٸی۔اس موقع پر ایڈیشنل ڈسٹرکٹ کلکٹر کے چندراریڈی، ڈسٹرکٹ فاریسٹ آفیسر ویناوانی، ڈی آر ڈی او گوپال، زرعی عہدیدارجان سدھاکر، ضلع افسران رشید اور میونسپل کمشنر بھاسکر ریڈی نے شرکت کی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button