تلنگانہ

انٹرمیڈیٹ فرسٹ ایئر کے نتائج میں تیکنیکی غلطیوں کو دور کرنے اے بی وی پی کا مطالبہ

انٹر کے نتائج میں تکنیکی غلطیوں کی اصلاح کی جانی چاہیے اور طلباء کے لیے مفت ازسرنو جائزہ لیا جانا چاہیے: اے بی وی پی

 

نارائن پیٹ (اردو لیکس) نارائن پیٹ ضلع مستقر میں اکھیلا بھارتیہ ودیارتھی پریشد کے زیراہتمام انٹر کالج کے طلبا کے ساتھ ڈی آئی ای او دفتر کے سامنے احتجاجی ریلی نکالی گئی۔ اس موقع پر ناراٸن پیٹ ضلع کنوینر رام کرشنا نے پروگرام سے خطاب کرتے ہوٸے کہا کہ کورونا کے تباہ کن حالات میں تعلیم کو بری طرح نظر انداز کرنے والی تلنگانہ حکومت نے آج انٹرمیڈیٹ کے طلباء کے نتائج میں رکاوٹ ڈال کر لاکھوں طلباء میں کنفیوژن اور خودکشی کا باعث بنی ہے۔ طلباء انتظامیہ کی جانب سے تذبذب کا شکار ہو کر رہ گئے ہیں غیرمعمولی %49 فیصد پاس کی شرح کے ساتھ یہ واضح ہے کہ بہت سے ہونہار طلباء پیپر کی تشخیص و جانچ کے عمل کے ساتھ ساتھ تکنیکی خرابیوں میں بھی ناکام رہے ہیں۔ ہزاروں طلباء کے سنگل ڈیجٹ نمبروں تک محدود ہونے کی وجہ سے حکومت کو چاہیے کہ ایک بار پھر نتائج کا دوبارہ جائزہ لے اور صاف و شفاف طریقے سے طلبا و طالبات کے حق میں نتائج کا اعلان کرے اور طلبہ کے ساتھ انصاف کرے۔ کیونکہ ماضی کی طرح اس مرتبہ بھی غلطیاں ایک بار پھر عیاں ہو رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انٹر طلبا کے نتائج کے اجراء سے قبل انٹرمیڈیٹ بورڈ کے پاس فیصد کی معلومات ہونے کے باوجود طلباء کو نتائج کے لئے تیار کرنے کے لیے کونسلنگ سینٹر قائم کرنے میں کوتاہی کرنا ظلم ہے۔

طلباء مایوسی کا شکار نہ ہوں ہمت سے کام لیں۔اے بی وی پی تنظیم ہمیشہ طلباء کے ساتھ ہے اور رہینگے۔ اس موقع پر نریش،وینکٹ رمنا، چرن،گنگادھر، وینکٹیش، امتیاز، ارون، نوین، شرن، سونال، منجوناتھ، آکاش وغیرہ شریک رہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button