اقلیتی امور سے متعلق وئیب سائٹ کا مختارعباس نقوی نے کیا افتتاح

اقلیتی امور (آزادانہ چارج) ، اور پالیمانی امور کے وزیر مملکت جناب مختار عباس نقوی نے آج یہاں اقلیتی امور کی وزارت کے ہندی ویب سائٹ کو باقاعدہ طور پر لانچ کیا اور ساتھ ہی تاحال اور نو تشکیل شدہ انگریزی ویب سائٹ کا بھی آغاز کیا۔ نو تشکیل شدہ ویب سائٹ کا پتہ یہ ہے: http://www.minorityaffairs.gov.inیہ ویب سائٹ استعمال کنندگان کیلئے ازحد آسان ہے اور اسے کھولنے اور دیکھنے میں کوئی دقت نہیں ہوتی۔ اس ویب سائٹ کو آئی پیڈ اور موبائل پر بھی دیکھا جاسکتا ہے۔ 

 

اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے جناب نقوی نے کہا کہ اقلیتی امو ر کی وزارت ہرطرح سے عوام کی خدمت کیلئے عہد بند ہے اور اس کام میں ٹیکنالوجی، سماجی میڈیا اور دیگر ذرائع کا بھی باقاعدہ استعمال کیا جائے گا۔ عام انسانوں تک بڑے پیمانے پر پہنچنے کی ہماری کوششوں کے ایک حصے کے طور پر یہ ایک قدم ہے تاکہ ترقی کے ثمرات سماج کے آخری انسان تک براہ راست اور صاف وشفاف طریقے سے پہنچ سکیں۔ 

 

وزیر موصوف نے کہا کہ وزارت کو استعمال کنندگان کی جانب سے حاصل ہونے والے فیڈ بیک (ردعمل) اور تجاویز کی شکل میں نئے نکات شامل کرتے رہنا چاہئے ۔جناب نقوی نے کہا کہ وزارت طلباء کو اسکالر شپ فراہم کرانے کی غرض سے موبائل ایپ لانچ کرنے کا منصوبہ بھی وضع کررہی ہے تاکہ طلباء کیلئے اس سلسلے میں ایک آسان پلیٹ فارم یا ذریعہ فراہم ہوسکے اور وہ اپنے موبائل فون کے ذریعہ اپنی درخواستیں پیش کرسکیں۔ 

 

جناب نقوی نے کہا کہ اقلیتی امور کی وزارت کے نو تشکیل شدہ ویب سائٹ میں مختلف بہبودی اسکیموں کی تفصیلات فراہم کرائی گئی ہیں جن کا مقصد یہ ہے کہ اقلیتی برادریوں کی سماجی-اقتصادی- تعلیمی حالت کو بہتر بنایا جاسکے۔ انہوں نے اعتماد ظاہر کیا کہ نوتشکیل شدہ ویب سائٹ عوام کیلئے مفید ثابت ہوگی۔ ضرورت مند افراد آسانی کے ساتھ اسکیموں کی جانکاری اس ویب سائٹ سے حاصل کرسکیں گے اور بہبود اسکیموں کا فائدہ اٹھاسکیں گے۔ 

 

جناب نقوی نے کہا کہ اس ویب سائٹ کا استعمال کنندگان کو زیادہ انٹراایکٹو تجربہ فراہم کرے گا اور وہ وزارت کے پروگراموں اور اسکیموں کو آسان اور شفاف طریقے سے سمجھ سکیں گے۔ وزیر موصوف نے بتایا کہ اس ویب سائٹ کے اضافی نکات میں فوٹو گیلری، ویڈیو گیلری، پریس ریلیز، اخباراتی ریلیز وغیرہ شامل ہیں۔ اس ویب سائٹ کا رابطہ سوشل میڈیا سائٹوں یعنی ٹوئیٹر، فیس بک اور یو ٹیوب سے بھی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس ویب سائٹ کے تحت فیڈ بیک میکانزم بھی دستیاب ہے جس کے توسط سے شہری وزارت کی اسکیموں اور پروگراموں کے سلسلے میں اپنے رد عمل کو براہ راست متعلقہ حکام تک پہنچاسکتے ہیں۔ 

 

یہ ویب سائٹ دیگر مقتدر سائٹوں، مثلاً مائی گورنمنٹ، پی ایم انڈیا، نیشنل پورٹل، گورنمنٹ آف انڈیا ویب ڈائرکٹری، پی ایم این آر ایف، پی جی پورٹل، نیشنل اسکالرشپ پورٹل وغیرہ سے بھی منسلک ہے اور اسے آسانی سے کھولا جاسکتا ہے۔