پیلیٹ گن کے استعمال پر غور کرنے راج ناتھ سنگھ کا تیقن

وادی کشمیرمیں بھڑکے تشدد کے درمیان سرینگر پہنچے مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ جو لوگ نوجوانوں کو تشدد کے لئے اکسا رہے ہیں ان کی شناخت کر لی گئی ہے. او ران کے خلاف جلد کارروائی ہوگی. انہوں نے کہا کہ دو دنوں میں انہوں نے تقریبا 20 تنظیموں کے نمائیندوں ساتھ ملاقات کی اور کشمیر میں امن کی بحالی کے لئے کون سے راستے اپنائے جائیں اس پر بات چیت کی گئی۔  جموں و کشمیر کی وزیر اعلی محبوبہ مفتی کے ساتھ  پریس کانفرنس میں انہوں نے کہا کہ 300 سے زیادہ لوگوں سے ملاقات میں انہوں نے ہر کسی سے ملاقات کی جو ان سے ملنا چاہتا تھا. ‘ وزیر داخلہ نے کہا کہ 2010 میں جب پیلیٹ گن لائی گئی تو مانا جا رہا تھا کہ اس سے سب سے کم نقصان ہوگا. لیکن آج یہ محسوس کیا جا رہا ہے کہ اس سے نقصان بڑھ رہا ہے. انھوں نے کہا کہ پیلیٹ گن کے استعمال پر غور کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کے مستقبل کے بغیر بھارت کا کوئی مستقبل نہیں ہے. علیحدگی پسندوں سے بات چیت کے معاملے پر راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ انسانیت، کشمیریت اور جمہوریت کے دائرے میں رہ کر کوئی بھی بات چیت کرنا چاہے تو کر سکتا ہے لیکن کشمیر کے لوگوں کے مفادات سے کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے.