جنرل نیوز

ملک کی آزادی کے 75 ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد ہونے والی تقاریبات کیلئے وسیع تر انتظامات کرنے نظام آباد ضلع کلکٹر کی عہدیداروں کو ہدایت   

ملک کی آزادی کے 75 ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد ہونے والی تقاریبات کیلئے وسیع تر انتظامات کرنے ضلع کلکٹر کی عہدیداروں کو ہدایت

8/ اگست تا 22 / اگست تک مختلف پروگراموں کے لائحہ عمل کو قطعیت

نظام آباد:5/ اگست (اُردو لیکس)ضلع کلکٹر سی نارائن ریڈی نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ ملک کی آزادی کی 75 ویں سالگرہ کے موقع پر منعقد ہونے والی امروت مہا اتسو (وجروتسووا) تقریبات کے لیے وسیع انتظامات کریں۔جمعہ کی شام ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ عہدیداروں کے ساتھ جائزہ لینے کے دوران کلکٹر نے کہا کہ آزادی کے امروت مہا اتسو کے تناظر میں اس ماہ کی 8 تا 22 تاریخ تک مختلف پروگرام شروع کئے جائیں گے۔ پہلے دن چیف منسٹر حیدرآباد میں تقریبات کا آغاز کریں گے اور منڈل سطح کے اعلیٰ افسران کو 9 تاریخ کو ضلع سطح پر ہونے والے اجلاس میں شرکت کرنی ہوگی۔ 10 تاریخ کو ہر گاؤں کی پنچایت اور وارڈ میں وانا مہوتسوم کا انعقاد عمل میں لایا جارہا ہے ایک جگہ پر کم از کم 750 پرکشش پودے لگانے کا اس علاقے کو فریڈم پارک کہا جائے گا۔ 11 تاریخ کو میونسپل اور منڈل سطح پر فریڈم رن، 12 تاریخ کو نیشنل یونٹی رکشا بندھن، 13 تاریخ کو این سی سی، این ایس ایس، اسکاؤٹس اور گائیڈس کے ملازمین کے ساتھ ریلی نکالی جائے اور کھیتوں میں ترنگے غبارے لہرائے جائیں۔

 

لوک فنکاروں کی 14ویں ضلعی اور حلقہ بندی کی سطح پر پرفارمنس، آتش بازی، 15ویں یوم آزادی کی تقریبات، تمام علاقوں میں مقررہ وقت پر 16واں ماس قومی ترانہ، شاعری سمیلن، ڈسٹرکٹ سینٹر میں 17واں خون عطیہ کیمپ، 18واں فریڈم کپ کے نام پر کھیلوں کے مقابلوں کا انعقاد۔ ملازمین، نوجوان، 19 تاریخ کو یتیم خانوں، اولڈ ایج ہوم، اسپتالوں اور جیلوں میں پھل تقسیم کیے جائیں گے، 20 تاریخ کو سیلف ہیلپ سوسائٹیز اور خواتین کے لیے رنگولی مقابلے منعقد کیے جائیں گے، اور 22 تاریخ کو حیدرآباد کے ایل بی اسٹیڈیم میں اختتامی تقریبات ہوں گی۔ تمام سطحوں پر حکام کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ ان تہواروں کے انعقاد کے لیے بغیر کسی کوتاہی کے انتظامات کریں۔ متعلقہ حکام کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ محکمہ تعلیم کے زیر اہتمام خصوصی طور پر تیار کیے گئے پروگراموں پر عمل کریں اور ان کے انتظام کے لیے مو ثر اقدامات کریں۔ کلکٹر نے کہا کہ 15 تاریخ کو گھر گھر جھنڈیاں تقسیم کی جائیں تاکہ ہر گھر پر ترنگا جھنڈا لہرایا جائے اور ساتھ ہی اس بات کا بھی خیال رکھا جائے کہ فلیگ کوڈ پر سختی سے عمل آوری کی جائے۔ قومی پرچم کو احترام کے ساتھ لہرایا جائے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button