حج 2017 کیلئے آن لائن درخواست قبول کرنے کا عمل شروع

اقلیتی امور کے وزیر مملکت (آزادانہ چارج) نیز پارلیمانی امور کے وزیر مملکت جناب مختار عباس نقوی نے آج ممبئی کے حج ہاؤس میں حج کمیٹی آف انڈیا کے موبائل ایپ کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر تقریر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ی پہلی بار ہو رہا ہے کہ حج کے لئے درخواست دینے کا عمل ڈیجیٹل ہو رہا ہے۔ یہ موبائل ایپ آج یعنی 2/جنوری 2017 سے گوگل کے پلے اسٹور پر دستیاب ہوگا۔ آئندہ حج کا اعلان قبل ہی کر دیا گیا ہے اور اس کے لئے درخواست آج سے وصول کی جائے گی۔ درخواست جمع کرانے کی آخری تاریخ 24/جنوری 2017 ہے۔
انہوں نے کہا کہ اقلیتی امور کی وزارت بڑے پیمانے پر ڈیجیٹل انڈیا مہم میں شریک ہو گئی ہے ۔ اس سلسلہ میں متعدد عمل کیا گیا ہے۔ مرکزی حکومت عازمین حج کو مکمل شفافیت اور سہولت کے معقول مواقع فراہم کرانے کی غرض سے آن لائن درخواست جمع کرانے کی حوصلہ افزائی کر تی رہی ہے۔ حج کمیٹی کے ایپ میں حج کے لئے درخواست دینے، پوچھ تاچھ اور معلومات، خبریں اور اپ ڈیٹ نیز ای-پیمنٹ، اس کی اہم خصوصیات ہیں۔ اس ایپ کے ذریعہ حج کے لئے براہ راست درخواست دی جا سکتی ہے۔ اس میںپانچ بالغ افراد اور دو چھوٹے بچے ایک گروپ کی شکل میں مل کر درخواست دے سکتے ہیں بعدازاں درخواست فارم کو ایک پی ڈی ایف کا فی درخواست دہندہ کے ای-میل میں پہنچ جائے گی۔ اس درخواست پر تصویر چسپاں کرنے کے بعد دستاویزات کا پرنٹ آؤٹ براہ راست ریاستی حج کمیٹیوں کو بھیجنا ہوگا۔ اس ایپ کے ذریعہ رجسٹریشن فیس بھی ادا کی جا سکتی ہے۔
جناب نقوی نے کہا کہ گزشتہ ماہ نئی دہلی میں حج سے متعلق ایک نئی ویب سائٹ شروع کی گئی تھی۔ یہ ویب سائٹ ہندی، اردو اور انگریزی زبانوں میں ہے، جس میں حج سے متعلق تمام ضروری معلومات مہیا ہوں گی۔
جناب نقوی نے مزید کہا کہ یہ ویب سائٹ ان لوگوں کے لئے بھی کافی مفید ہوگی، جو حج کے لئے آن لائن درخواست دے سکیں گے۔ اس ویب سائٹ میں اقلیتی امور کی وزارت، محکمہ حج، عازمین حج، حج سے متعلق قوانین و ضوابط، حج کمیٹی آف انڈیا اور پرائیویٹ ٹورآپریٹرز سے متعلق تفصیلی معلومات حاصل ہوں گی۔ ویب سائٹ پر دوران حج کیا کرنا چاہئے اور کیا نہیں کرنا چاہئے، کے علاوہ حج سے متعلق مختلف پہلوؤں کے بارے میں فلمی معلومات موجود ہوں گی۔