مسلم شادیوں اور طلاق کے لئے نیا قانون بنانے سپریم کورٹ میں مرکز کا موقف

نئی دہلی ۔15 مئی ( اردو لیکس ڈیسک)  مرکز کی این ڈی اے حکومت نے کہا ہے کہ اگر سپریم کورٹ تین طلاق کے طریقہ کو ختم کرتی ہے تو ایسی صورت میں مرکز کی جانب سے مسلمانوں کی شادیوں اور طلاق کے سلسلے میں ایک قانون بنایا جائے گا ۔سپریم کورٹ میں جاری تین طلاق کی سماعت کے دوران حکومت نے اپنے موقف کو پیش کیا ۔حکومت کی طرف سے عدالت میں پیش ہوتے ہوئے اٹارنی جنرل مکھوت روہتگی نے کہا کہ عدالت کی جانب سے تین طلاق کے مقدمہ کو خارج کردیا جاتا ہے تو مرکزی حکومت مسلم شادیوں اور طلاق کو طے کرنے نیا قانون بناے گی ۔