نیشنل

بہار سیلاب متاثرین کے لیے جمعیۃ علماء ہند کی ریلیف

نئی دہلی ۔21 اگست / شمالی بہار اور سیمانچل میں آئے قیامت خیز سیلاب کی قہرسامانیوں سے اپنا آشیانہ کھوچکے لاکھوں افراد دانے دانے کو ترس رہے ہیں، چہار جانب اتھاہ پانی میں گھرے ہونے کی وجہ سے زیادہ تر افراد نفسا نفسی کے عالم ہیں۔ایسے میں جمعیۃ علماء ہند نے راحت رسانی کے عمل میں مزید تیزی پیدا کرتے ہوئے جامعہ امدادیہ مادھے پور کٹیہار میں باضابطہ ریلیف کیمپ قائم کیا ہے ۔نیز اب تک اشیائے خوردنی پر مشتمل چھ ہزار سے زائد فوڈ کٹس تقسیم کی جاچکی ہیں ۔واضح ہو کہ ارریہ ، پورنیہ او رکشن گنج میں جمعےۃ پہلے سے ہی ریلیف کیمپ چلا رہی ہے۔

آج نئی دہلی میں جمعیۃ علماء ہند کے جنرل سکریٹری مولانا محمود مدنی نے بتایا کہ مرکزی دفتر سے ابتدائی طور سے دو قسطوں میں بیس لاکھ رقم ارسال کی جاچکی ہے۔ اس کے علاوہ جمعیۃ علماء ہند ،عیدالاضحی کے موقع پر متاثرہ علاقوں اور راحت کیمپوں میں قربانی کا نظم کرے گی۔مولانا مدنی نے صاحب استعداد اور اہل خیرحضرات کو متوجہ کیا ہے کہ ا س بار اپنے حصے کی قربانی بہار کے متاثرہ علاقوں میں کراکے دوہرا اجر حاصل کریں۔ مولانا مدنی نے بتایا کہ ملک بھر میں جمعیۃ علماء ہند کی یونٹیں متحرک ہیں او ر اپنے اپنے طور سے راحت رسانی میں تعاون کررہی ہیں۔مولانا مدنی نے کہا کہ ہمارے کارکنان نے کشن گنج میں ایک سرسوتی سشو مند ر تعلیم گاہ کے ہاسٹل میں پھنسے طلباء کے لیے تین دن تک کھانے پینے کا انتظام کرکے فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی اچھی مثال قائم کی ہے ۔

ادھر راحت رسانی کے کاموں کو انجام دینے میں سرگرم جمعیۃ علماء ہند کے ذمہ داروں نے ہلاکتوں کی بڑھتی تعداد کے مدنظر یہ طے کیا ہے کہ جو افراد غائب ہیں یا جن کی لاشیں اہل خانہ کو دستیاب نہیں ہوئیں، ان کے لواحقین کی جانب سے ایف آئی آر درج کرائی جائے گی ۔جمعیۃ علماء ہند کے سکریٹری مولانا حکیم الدین قاسمی نے بتایا کہ جمعےۃ علماء ہند کی راحت رساں ٹیم نے ان علاقوں او ربستیوں تک رسائی حاصل کی ، جہاں تک دوسرے سرکاری اور غیر سرکاری عملے اب تک نہیں پہنچ سکے ہیں۔کٹیہار میں بالو گنج، سروالی ٹولہ، ڈھاپی، تیلتا،سری پور،مادھے پور اور منور نگر پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا، یہاں اکثر و بیشتر مکانات زمین دوز ہیں اور گاؤں میں پانی بھرا ہوا ہے ۔ضلع کشن گنج میں ٹھاکر گنج، پوا خالی،میر بھٹہ، التا باڑی ،بہادر گنج وغیرہ کے معائنہ کے درمیان بھی یکساں حالات پائے گئے ۔کشن گنج شہر میں جمعےۃ علماء کشن گنج کے خازن حاجی محمد مسلم صاحب نے مسلسل تین دن تک سرسوتی مندر کے زیر انتطا م تعلیم گاہ ہاسٹل میں مقیم ڈیرھ سو سے زائد لوگوں کے لیے کھانے پینے کا نظم کرکے فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی اچھی مثال قائم کی ہے ، جس کے لیے تعلیم گاہ کے پرنسپل صا حب نے جمعیۃ کا شکریہ بھی ادا کیا ۔ جمعیۃ علماء بہار کے ناظم اعلی مولانا محمد ناظم ، مفتی محمد جاو ید اقبال کشن گنجی ، مولانا غیاث الدین ، مولانا قاری نوشاد عادل، مولانا محسن اعظم وغیرہ نے مختلف علاقوں میں راحتی اشیاء تقسیم کیں، جمعیۃ علماء مونگیر کے صدر مولانا عبداللہ بخاری بھی اشیاء خوردنی پر مشتمل سامان لے کر متاثرہ علاقہ پہنچ گئے ہیں ۔

ضرورت مندوں کی رسائی کو سہل بنانے کے لیے جمعیۃ کے ذریعہ قائم کردہ ریلیف کیمپ کے ذمہ داروں کے رابطہ نمبرس حسب ذیل ہیں (۱) ارریہ ریلیف کیمپ :الحاج بذل الرحمن :9431284188،ڈاکٹر محمد عابد حسین :9631240796 (۲) کشن گنج ریلیف کیمپ: مولانا غیاث الدین :9472477241، مولانا معروف کرخی، مولانا مناظر نعمانی :9973780950، مولانا خالد :8809310600(۳) پورنیہ ریلیف کیمپ: مولانا امتیاز :9973652168، قاری طیب :9955716970(۴) کٹیہارریلیف کیمپ: مولانا بدرالدجی 8676076486، مفتی منصور عالم ناظم جامعہ امدادیہ مادھے پور 8877757816

متعلقہ خبریں

Back to top button