تلنگانہ

حیدرآباد میں دھواں دھار بارش ہر طرف پانی ہی پانی

حیدرآباد 25 اگست/ شہرحیدرآباد میں آج رات دھواں دھاربارش ہوئی جس کے بعد ہر طرف پانی ہی پانی نظرآنے لگا سڑکوں پر پانی جمع ہو جانے کی وجہ سے سڑکیں جھیلوں میں تبدیل ہو گئی تھی۔ جمعہ کی رات 8 بجے شروع ہونے والی بارش کا سلسلہ رات 3 بجے تک جاری رہا ۔بالانگر اور مادھاپور کے علاقے میں 12 سنٹی بارش ریکارڈ کی گئی ۔سڑکوں سے گزرنے والوں کی گاڑیوں آدھے سے ذیادہ پانی میں ڈوب گئی اور بعض گاڑیاں رک گئیں۔ لوگ پانی سے بچنے کے لئے گھروں کے سائبان تلے یا بند دکانات کے شیٹرس کے سامنے کھڑے دیکھے گئے۔حیدرآباد اور سکندرآباد کے کئی نشیبی علاقوں کے مکانات میں پانی داخل ہو گیا۔ دھواں دھار بارش کے بعد مین ہولس ابل پڑے اور سڑکوں پر اني جمع ہو جانے سے لوگوں کو آنے جانے میں مشکلات پیش آئیں اوروہ جس جگہ پر تھے وہیں کھڑے دیکھے گئے۔ ویسے تو حیدرآباد میں آج صبح سے ہی موسم ابرآلود تھا لیکن شام ہوتے ہوتے بادل چھا گئے اور اس کے بعد اچانک موسلادھار بارش شروع ہو گئی۔ گرج چمک اور ہواؤں کے ساتھ ہوئی بارش کی وجہ سے کوئی جانی یا مالی نقصان کی اطلاع تو نہیں ملی لیکن شہر میں ہر طرف پانی ہی پانی نظر آ رہا تھامحکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ خلیج بنگال میں ہوا کے کم دباؤ کی وجہ سے کے اثر سے بارش ہو رہی ہے۔تلنگانہ بھرمیں اگلے 3 دنوں تک بارش کی پیش قیاسی کی گئی ہے۔ یہ بارش صرف حیدرآباد سکندرآباد میں ہی نہیں بلکہ ریاست تلنگانہ اور آندھرا پردیش کے کئی مقامات پر ہو رہی ہے بارش کی وجہ سے دونوں ریاستوں کے کئی ذخائر آب کی سطح میں اضافہ ہو گیا۔ صبح کی اولین ساعتوں تک بھی تیز بارش کا سلسلہ جاری رہا۔ بارش کی وجہ سے گنیش پنڈالوں کے پاس بھی پانی جمع ہونے کی اطلاعات ہیں۔ کمشنر جی ایچ ایم سی نے رات دیر گئےبنجارہ ہلز پہنچ کر اپنی نگرانی میں پانی کی نکاسی کا کام کروایا۔ بارش کے دوران شہر کے بعد علاقوں میں برقی سربراہی بند ہو گئی تھی۔

IMG-20170825-WA0073

متعلقہ خبریں

Back to top button