مریض کی موت پر حیدرآبا دکے گاندھی ہسپتال میں ڈاکٹرس پرحملہ، ڈاکٹرس نے ہڑتال کردی

حیدرآباد 20 ستمبر/ ریاست تلنگانہ حیدرآباد کے گاندھی ہسپتال میں علاج میں لاپرواہی کا الزام عائد کرتے ہوئے مریض کے رشتہ داروں نے ڈاکٹرس پر حملہ کردیا جس کے بعد ڈاکٹرس نے ہڑتال کردیا۔ سکندرآباد کے مشیر آباد کے رہنے والے 70 سالہ چاند میاں کو دل کا دورہ پڑنے پر چہارشنبہ کی صبح کی ابتدائی ساعتوں میں گاندھی ہسپتال لے جایا گیا۔

ایمرجنسی وارڈ میں ڈاکٹرس کی جانسے علاج میں لاپرواہی پر انھیں ان کے رشتہ دارکارپوریٹ ہسپتال لے گئے وہاں لاکھوں روپئے کا مطالبہ کیا گیا۔ دوبارہ چنو میاں کو گاندھی ہستپال لا یا گیا ڈاکٹرس نے انھیں خانگی ہسپتال لے جانے کا مشورہ دیا اس دوران مریض کی طبعیت مزید بگڑ گئی اور انھوں نے دم توڑ دیا۔ متوفی کے رشتہ داروں نے ڈاکٹرس پر علاج میں لاپرواہی اور تاخیر کا الزام لگایا اور ڈاکٹرس پر حملہ کردیا۔ پولیس نے متوفی کے ایک رشتہ دار غوث کو حراست میں لے لیا۔ حملہ پر برہم گاندھی ہسپتال کے ڈاکٹرس ہڑتال پر چلے گئے۔