نیشنل

محرم کے دن درگا مورتیوں کے وسرجن کی کلکتہ ہائیکورٹ نے دی اجازت، ممتابنرجی کو ہندو اور مسلمانوں کو تقسیم نہ کرنے کا دیا مشورہ

کلکتہ۔ 21 ستمبر / مغربی بنگال کی ہائی کورٹ نے محرم کے دن درگاماتا کی مورتیوں کو وسرجن کی اجازت دیتے ہوئے چیف منسٹر ممتا بنرجی کے ان احکامات کو کالعدم کردیا جس میں محرم کے دن درگا مورتیوں کے وسرجن کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا تھا حکومت کے فیصلے کے خلاف داخل درخواست کی سماعت کرتے ہوئے چیف جسٹس راکیش تیواری نے ریمارک کیا کہ چیف منسٹر اس طرح کے فیصلے لیتے ہوئے  دونوں طبقوں ہندو اور مسلمان کے درمیان اختلافات پیدا نہ کریں اور انھیں ایک دوسرے کے ساتھ مل کر رہنے کا مواقع فراہم کریں ۔23 اگست کو چیف منسٹر ممتا نے مذہبی قائدین کے ساتھ ایک اجلاس منعقد کرتے ہوئے بتایا کہ ریاست میں 30 ستمبر سے مورتیوں کا وسرجن ہوگا اور یکم اکتوبر کو محرم ہے جس کے پیش نظر محرم کے دن مورتیوں کو وسرجن کی اجازت نہیں رہے گی البتہ 2 اکتوبر سے 4 اکتوبر تک وسرجن کی اجازت دی جائے گی ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ ریاست میں لا اینڈ آرڈر کی صورتحال کو برقرار رکھنے کے لئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے محرم کے جلوس کے دن درگا مورتی وسرجن کی اجازت دی جاتی ہے تو ایسی صورت میں حالات خراب ہو سکتے ہیں 

متعلقہ خبریں

Back to top button