نیشنل

برقعہ پہنی خواتین کے مندرمیں آرتی اتارنے پر مسلمان برہم

نئی دہلی22 اکتوبر/ برقعہ پہنی ہوئی خواتین کی جانب سے وزیراعظم نریندرمودی کے پارلیمانی حلقہ وارانسی میں رام کی آرتی اتارنے اور تصاویر کے سامنے دیئے جلانےپرمسلمانوں میں شدید برہمی پائی جاتی ہے۔ واضح رہے کہ میڈیا میں ایسی تصاویر ان دنوں گشت کررہی ہیں جس میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بعض پرقعہ پہنی ہوئی خواتین اکثریتی طبقہ کی خواتین کے ساتھ ملکر یہ غیراسلامی حرکتیں کررہی ہیں۔ دیوبند کےعلماء نے ایسی خواتین کو اسلام سے خارج قراردیا اور کہا کہ ایسی  خواتین کو اللہ سے معافی مانگتے ہوئے دوبارہ کلمہ پڑھنا چاہئے، دارالعلوم زکریا کےاستاد اور فتویٰ آن موبائل کے چیئرمین مفتی ارشد فاروقی سمیت دیگرعلمائے کرام نے کہا کہ مسلمان صرف اللہ کی عبادت کر تا ہے جن خواتین نے دوسرے مذہبی عقیدے کو اپناتے ہوئے یہ سب  کیا ہے وہ اسلام سے خارج ہیں کیونکہ اسلام میں اللہ کے سوا کسی دوسرے مذہب کے ساتھ محبت اور نرمی تو برتی جا سکتی ہے لیکن عبادت نہیں کی جا سکتی لہذا یہ بہتر ہے کہ وہ اپنی غلطی کو قبول کرے اوردوبارہ کلمہ پڑھکرتجدید ایمان کریں۔
 

متعلقہ خبریں

Back to top button