ایجوکیشن

مساوی مواقع کے زیرعنوان اُردو یونیورسٹی حیدرآباد میں قومی کانفرنس

حیدرآباد 5 جنوری/ مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی حیدرآباد میں 16؍ جنوری کو قومی کانفرنس بعنوان ’’مساوی مواقع۔ نظریات اور عمل: توضیح و تفہیم‘‘ کا انعقاد عمل میں آرہا ہے۔ یونیورسٹی کے مساوی مواقع سیل اور سیول سرویس کوچنگ اکیڈمی (سی ایس ای)، شعبہ تعلیم نسواں، سوشل ورک اور البیرونی مرکز برائے مطالعات سماجی اخراج و اشتمالی پالیسی کے تعان سے اس ایک روزہ کانفرنس کا انعقاد عمل میں لایا جارہا ہے۔
افتتاحی اجلاس 16؍جنوری کو صبح 9 بجے سی ایس ای آڈیٹوریم میں منعقد ہوگا۔ ملک کے ممتاز اسکالرس اور ماہرین نظم و نسق جن میں جناب پی ایس کرشنن، سابق معتمد حکومت ہند؛ پروفیسر بی ایل منگیکر، سابق رکن منصوبہ بندی کمیشن؛ جناب جی سدھیر صدر نشین، کمیشن آف انکوائری، پروفیسر فیضان مصطفی، وائس چانسلر نلسار یونیورسٹی، پروفیسر ابو صالح شریف، مولانا آزاد چیئر، مانو؛ پروفیسر شیلا پرساد، یونیورسٹی آف حیدرآباد، ڈاکٹر فلیویا اگنیس، ممتاز ماہر قانون، پروفیسر سنگیتا کامت، میساچوسٹ یونیورسٹی، امریکہ؛ پروفیسر شاہدہ مرتضیٰ، ڈاکٹر افروز عالم اور ڈاکٹر عبدالشعبان، ڈپٹی ڈائرکٹر ٹاٹا انسٹیٹیوٹ آف سوشل سائنس، ممبئی شامل ہیں، کانفرنس سے خطاب کریں گے۔ جنسی مساوات، حقو قِ نسواں، شادی اور طلاق، تحفظات، سماجی اور قانونی مسائل موضوع بحث آئیں گے۔
ملازمت کے مارکٹ میں کئی طبقات کو درپیش چیلنجس کے پیشِ نظر ملک کی مختلف ریاستوں میں تمام طبقات کو مساوی مواقع کی فراہمی پر ان دنوں مباحث جاری ہیں۔ گجرات کی پٹہ دار تحریک اور مہاراشٹرا میں دلت احتجاج اسی تشویش کا اظہار ہیں۔ اس تناظر میں ایک حقیقی اشتمالی ایجنڈے اور پالیسی کی تیاری کافی اہمیت رکھتی ہے۔ ان مسائل پر مباحث کے لیے ہی اس ایک روزہ قومی کانفرنس کا اہتمام کیا جارہا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button