انٹرٹینمنٹ

آندھراپردیش حکومت کا سوریہ نمسکار پروگرام – مختلف مذاہب کے افراد کی شرکت

وجے واڑہ ۔28 جنوری ( اردو لیکس)  آندھراپردیش کی چندرابابو نائیڈو حکومت نے وجے واڑہ کے اندراگاندھی میونسپل کارپوریشن اسٹیڈیم میں سوریہ نمسکار پروگرام کا اہتمام کیا ۔اس پروگرام میں چیف منسٹر چندرابابابو ریاستی وزرا عہدیداروں اور ہندو، مسلم، کرسچین کے مذبہبی پیشوا نے شرکت کی ۔اس موقع پر سورج کی پوجا کی گئی ۔اسکولی بچوں نے سوریہ رادھنا کے 12 آسن بھی کئے ۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ 450 کروڑ سال سے سورج دنیا کو روشنی دے رہا ہے امیر ،غریب ،ہندو مسلم ہر طبقے کے افراد سورج کی روشنی سے مستفد ہورہے ہیں انہوں نےکہا کہ بعض افراد سوریہ نمسکار پروگرام کی مخالفت کررہے ہیں جو معنی خیز ہے سوریہ نمسکار پروگرام کا کسی مذہب سے تعلق نہیں ہے ہر کوئی اس میں شرکت کرسکتا ہے چیف منسٹر نے کہا کہ سورج ہی ان کی ریاست کا برانڈ ایمبسڈر ہے ہر سال حکومت کی طرف سے سوریہ رادھنا پروگرام کا اہتمام کیا جائے گا ۔انھوں نے کہا کہ اے پی سن رایز اسٹیٹ کا نام دیا گیا ہے ۔پروگرام میں تمام مذاہب کے پیشواؤں نے اجتماعی دعائیہ بھی کی ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button