وہ قتل نہیں حادثہ تھا : کمشنر پولیس حیدرآباد

حیدرآباد کے کمشنر پولیس مہیند ریڈی نے انجینئرنگ کی طالبہ کی موت پر پڑے راز کے پردے ہٹاتے ہوئے کہا کہ طالبہ کا قتل نہیں کیا گیا ہے بلکہ اس کی حادثہ مِں موت ہوئی ہے۔

واضح رہے کہ پچھلے اتوار کو شہر کے بنارہ ہلز علاقہ میں ہوئے ایک حادثہ میں دیوی نامی طالبہ ہلاک ہوگئی تھی جس کے بعد اس کے گھر والوں نے شک و شبہات ظاہر کئے تھے۔

کمشنر پولیس مہیندر ریڈی نے آج پریس کانفرنس میں بتایاکہ گذشتہ اتوار کی رات انجینئرنگ کی طالبہ دیوی اپنے دوستوں بھرت ‘ سنالی ‘وشواناتھ ‘ پرتھوی‘ویویک کے ساتھ کار میں پب پہنچی۔ وہ تمام ایک ایونٹ دیکھنے کے لئے گئے ہوئے تھے۔ پب میں پروگرام ختم ہونے کے بعدد وہ 3:32 شب بھرت کی کار میں گھر جانے کیلئے روانہ ہوئی راستہ میں 3:42شب ان کی گاڑی حادثہ کا شکار ہوگئی ۔ پولیس نے مقام حادثہ پر پہنچ کر لڑکی کو اسپتال منتقل کیا تب تک دم توڑچکی تھی۔ کمشنر پولیسنے بتا یا کہ حادثہ کے وقت بھرت نشہ میں دھت گاڑی گاڑی چلا رہاتھا  اس کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔