Uncategorized

بابری مسجد کی شہادت پر ترون گوگوئی کی حق گوئی

آسام کے چیف منسٹر ترون گوگوئی نے انکشاف کیا کہ بابری مسجد کی شہادت کے مسئلہ پر سابق وزیراعظم پی وی نرسمہا راؤ نے انہیں مکتوب روانہ کیا تھا لیکن انہوں نے اس پر توجہ نہیں دی۔

بابری مسجد کی شہادت کے وقت وزیر غذا رہے ترون گوگوئی نے اس وقت کے حالات اور پی وی نرسمہا راؤ کے رویہ پر شدید ناراضگی ظاہر کی اور کہا کہ پی وی نرسمہا راؤ کو پارٹی پر گرفت نہیں تھی۔ ترون گوگوئی نے ’’ٹرن اراونڈ ۔ لیڈنگ آسام فرم دی فرنٹ ‘‘کے نام سے ایک کتاب لکھی ہے۔ یہ تمام خلاصہ انہوں نے اسی کتاب میں کیا۔ گوگوئی نے یہ بھی کہا کہ بابری مسجد کی شہادت کے وقت پی وی نرسمہا راؤ کی جانب سے اختیار کیا گیا موقف ٹھیک نہیں تھا۔ ساتھ ہی ساتھ انہوں نے پی وی نرسمہا راؤ کی تعریف بھی کی اور کہا کہ وہ ایک قابل شخص تھے اور ان کے دور میں کئی اصلاحات لائی گئی ہیں۔

کبھی بھی وہ وزرا کے کام میں مداخلت نہیں کرتے تھے۔ واضح رہے کہ سال 2001 سے بحیثیت چیف منسٹر آسام خدمات انجام دے رہے ترون گوگوئی نے اپنی سیاسی زندگی کی اہم تجربوں پر مشتمل ایک کتاب لکھی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button