سنٹرل ایمیونیشن ڈیپو میں آتشزدگی مہلوک فوجیوں کی تعداد 20 ہوگئی

 سنٹرل ایمیونیشن ڈیپو واقع پُل گاؤں میں آگ لگنے کے حادثہ میں 20 فوجی ہلاک ہوگئے۔ سی اے ڈی پُل گاؤں مہاراشٹر میں ناگپور سے تقریبا 115 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ یہ ڈیپو زائد از سات ہزار ایکڑ رقبے پر پھیلا ہوا ہے اور بھارتی بری فوج کا ایک اہم اسلحہ ڈیپو ہے۔ یہاں گوناگوں قسم کا گولہ بارود متعدد شیڈز میں ڈیپو کے اندر رکھا جاتا ہے۔ ابتدائی رپورٹوں کے مطابق آگ ایک شیڈ میں صبح تقریبا 0100 بجے لگی اور فوری کارروائی کے طور پر کوئیک ری ایکشن ٹیم نے آگ بجھانے کا سلسلہ شروع کیا۔ آگ بجھانے کی ٹیمیں ڈیپو کے اندر ہی رہتی ہیں اور آگ بجھانے کے میکنزم کو طے شدہ ضوابط کے مطابق حرکت میں لایا گیا۔ اِس پیش بندی کے نتیجے میں آگ ایک ہی شیڈ تک محدود ہو گئی، جہاں از حد حسا س نوعیت کا گولہ بارو د رکھا ہوا تھا۔

آگ پوری طرح سے بجھا دی گئی ہے اور صورتحال پر قابو پا لیا گیا۔ تاہم آگ بجھانے کی کوششوں میں دو افسران عملے کے 14 افراد (ایک بری فوج کا جوان اور آگ بجھانے کے عملے کے 13 سویلین ارکان) کی جانوں کا اتلاف ہو گیا اور 2 جوان اور عملے کے 15 اراکین( 9 بری فوج کے جوان اور 6 آگ بجھانے کے عملے کے ارکان) مجروح ہو گئے ۔ مجروحین کو ملٹی اسپیشلٹی ہاسپٹل وردھا میں (جو پُل گاؤں سے 35 کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہے) بھرتی کرایا گیا ہے اور وہاں ان کا طبی علاج چل رہا ہے۔ مجروحین کی طبی حالت مستحکم ہے۔ بری فوج کی میڈیکل ٹیموں کو پُنے سے خصوصی طبی امداد دینے کے لئے یہاں بھیجا گیا ہے۔

آگ لگنے کی وجوہات کا ابھی تک تعین نہیں کیا جا سکا ہے۔ خسارے کا اندازہ لگانے کی کارروائی جاری ہے۔ بری فوج نے اس حادثے کی جانچ کے احکامات جا ری کئے ہیں۔ ہم ان بہادر ہستیوں کے کنبوں کے تئیں دلی تعزیت کا اظہار کرتے ہیں، جنہوں نے ڈپو کے اندر رکھے اہم نوعیت کے گولہ بارود کی حفاظت اور سلامتی کرتے ہوئے اپنی جانیں نچھاور کردیں۔