صدر جمہوریہ نے اندرا گاندھی میڈیکل کالج کے گولڈن جوبلی جلسہ تقسیم اسناد میں شرکت کی

صدر جمہوریہ جناب پرنب مکھرجی نے آج شملہ میں اندرا گاندھی میڈیکل کالج کے گولڈن جوبلی جلسہ تقسیم اسناد میں شرکت کی۔ 

 

اس موقع پر اپنی تقریر میں جناب مکھرجی نے گریجویشن کرنے والے طلبا کے لیے یہ کنووکیشن ان کے طویل علمی کام کی اختتامی تقریب کی حیثیت رکھا ہے اور اب زندگی کے نئے مرحلے میں داخل ہوتے ہوئے انہیں یہ بات یاد رکھنی چاہیے کہ انہوں نے گزشتہ برسوں کے دوران یہاں سے جو ہنرمندی اور علم حاصل کیا ہے وہ مستقبل کی دشواریوں پر قابو پانے میں معاون ثابت ہوگا۔ انہوں نے زور دیکر کہا کہ ان طلبا کو اپنے ملک اور سماج کے تئیں احساس ذمہ داری اور عہدبستگی ہونا چاہیے۔ 

 

جناب مکھرجی نے کہاکہ ہمارے ملک میں صحت کی دیکھ بھال کے نظام کو مختلف چیلنج درپیش ہیں۔ آج طبی شعبے میں طبعی ڈھانچہ جاتی سہولیات کو وسعت دینے کی شدید ضرورت ہے تاکہ ہندوستان کے دیہی علاقو ں میں آباد ملک کے تقریباً 75 فیصد افراد کو مساوی اور معیاری طبی سہولیات فراہم کرائی جاسکیں۔ اس لیے دیہی علاقوں میں خدمات انجام دینے والے ڈاکٹروں کے لیے ایک اہم پہلو یہ ہے جس پر مرکز اور ریاستی سرکاروں کو مل جل کر غور وخوض کرنا چاہیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں ملک کی زبردست آبادی کی طبی خدمات کے لیے مزید نرسوں اور طبی عملے کی ضرورت ہے۔ جناب مکھرجی نے طلبا کو مشورہ دیا کہ وہ یہ بات یاد رکھیں کہ مہاتما گاندھی نے دنیا میں اپنی پسندیدہ تبدیلی پیدا کرنے کی غرض سے کیا کہا تھا۔ انہوں نے زور دیکر کہا کہ آنجہانی مہا تما گاندھی نے، جو کمزور ترین اور انتہائی غریب افراد کے بارے میں سوچنے کے لیے کہا تھا وہ صحیح فیصلہ لینے کے لیے معقول ترین مشورہ تھا۔ 

 

اس موقع پر موجود سرکردہ شخصیات میں ہماچل پردیش کے گورنر آچاریہ دیوبرت اور ہماچل پردیش کے وزیراعلیٰ جناب ویر بھدر سنگھ موجود تھے۔