انٹر نیشنل

آمدنی کے اعلان کی اسکیم حکومت نے دیا مکمل رازداری کی یقین

حکومت نے ایسے تمام افراد کے لئے مکمل رازداری کی یقین دہانیکرائی ہے جو آمدنی اعلان اسکیم 2016 کے تحت اپنی آمدنی کا اعلان کریں گے۔ ممبئی میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ریونیو، حکومت ہند ہنس مکھ آدھیا نے کہا کہ اس اسکیم کے تحت آمدنی کا اعلان کرنے والوں سے ان کے ذریعے یا وسیلے کے بارے میں سوال نہیں کیا جائے گا۔ اور اعلان سے مستفید ہونے والوں کے خلاف کسی طرح کی کوئی کارروائی نہیں کی جائے گی۔ جناب آدھیا نے یہ بھی یقین دہانی کرائی کہ آمدنی کا اعلان کرنے والے فرد کی جانب سے داخل کی گئے کاغذات میں دی گئی اطلاعات کو قانون نافذ کرنے وا لی کسی دیگر ایجنسی کے ساتھ شیئر نہیں کیا جائے گا۔
واضح رہے کہ آمدنی کے اعلان اسکیم (آئی ڈی ایس) 2016 کا اعلان وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے بجٹ 2016-17 میں کیا تھا۔ اور اس کا نفاذ یکم جون 2016 سے ہونا تھا۔ آئی ڈی ایس کے تحت 30 ستمبر تک یعنی چار مہینے کا وقت عوام کو غیر اعلان شدہ آمدنی کو ظاہر کرنے کے لئے دیا گیا ہے تاکہ وہ ٹیکس ادا کرکے پنالٹی اور اس پر عائد ہونے والے 45 فیصد کے محصول سے بچ سکیں۔
ادھیا نے وضاحت کی یہ صرف ایک بار دیا گیا موقع ہے اور اس میں چار مہینے کے بعد یعنی 30 ستمبر 2016 کے بعد کسی طرح کی توسیع نہیں ہوگی۔ انھوں نے یہ بھی کہا کہ یہ اُن لوگوں کے لئے آخری موقع ہے جنھوں نے اپنی غیر احتساب شدہ آمدنی کا اعلان نہیں کیا ہے۔ اس مدت کے خاتمے کے بعد انکم ٹیکس کا محکمہ اپنی جانب سے کارروائی شروع کرے گا۔ سکریٹری موصوف نے یہ بھی بتایا کہ حکومت کو اس اسکیم کے سلسلے میں کئی تجاویز اور درخواستیں نیز ٹیکس ادا کرنے کے لئے مقررہ تاریخ میں توسیع کی گزارشات موصول ہوئی تھیں اور یہ بھی درخواست کی گئی تھی کہ بقایا ٹیکس کو قسطوں میں جمع کرنے کی سہولت دی جائے۔ انھوں نے واضح کیا کہ یہ تمام تجاویز ، درخواستیں اور عرضداشتیں حکومت کے زیر غور ہیں اور ان پر معقول فیصلہ جلد ہی لیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button