نیشنل

کسانوں کے ساتھ حکومت کی کل ہوگی بات چیت

نئی دہلی 3 ڈسمبر(اردولیکس) حکومت اور کسان یونینوں کے درمیان اگلے دور کی بات چیت کل نئی دہلی میں ہوگی۔ اِس سے پہلے حکومت اور کسان یونینوں کے درمیان چھٹے دور کی بات چیت پچھلے مہینے کی 30 تاریخ کو ہوئی تھی۔ میٹنگ کے دوران زراعت کے وزیر نریندر سنگھ تومر نے کسان رہنماﺅں کو یقین دلایا تھا کہ حکومت، اُن کی پریشانیوں کو دور کرنے کی پابند ہے۔ اور دونوں فریقوں کو ایک قابل قبول حل پر پہنچنے کیلئے پیش قدمی کرنے کی ضرورت ہے۔ انھوں نے کہا کہ میٹنگ میں چار معاملات میں سے دو پر اتفاق رائے کیا گیا تھا۔ جناب تومر نے کہا کہ پہلا معاملہ ماحول سے متعلق ایک آرڈیننس اور دوسرے معاملے کا تعلق بجلی قانون سے تھا۔ جناب تومر نے کسان یونینوں کو یقین دلایا تھا کہ MSP اور منڈی نظام پہلے کی طرح جاری رہے گا۔MSP قانون اور MSP نیز زرعی پیداوار کی مارکیٹ شرحوں کے درمیان فرق کے سلسلے میں کسان یونینوں کا مطالبہ، ایک کمیٹی کے تشکیل دینے کے بعد اِسے سپرد کیا جائے گا۔ زرعی قوانین میں ترمیم کیلئے یونینوں کا مطالبے کے بارے میں وزیر موصوف نے کہا تھا کہ اِسے بھی ایک کمیٹی کے سپرد کیا جائے گا جو اِس کے آئینی جواز اور کسانوں کی بہبود کو مدنظر رکھتے ہوئے، اِس کا مطالعہ کرے گی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button