نیشنل

کورونا پھیلانے کا الزام۔ تبلیغی جماعت کے 12 ارکان بے گناہ، عدالت نے دیا بری کرنے کا حکم

نئی دہلی: اترپردیش کی ایک مقامی عدالت نے کورونا پھیلانے کے الزامات کا سامنا کرنے والے تبلیغی جماعت کے 12 ارکان بشمول تھائی لینڈ کے 9 شہریوں کو ناکافی شواہد کی بنا پررہا کرنے کا حکم جاری کیا۔واضح رہے کہ گزشتہ سال مارچ میں دہلی کے مرکز نظام الدین میں منعقدہ جلسہ میں انڈونیشیاء، تھائی لینڈر، تمل ناڈو سمیت کئی ریاستوں سے اراکین تبلیغی جماعت نے شرکت کی تھی۔ جلسہ ختم ہونے کے بعد ہی کورونا وبا پھوٹ پڑی تھی۔ الزام لگایا گیا تھا کہ جلسہ کے اراکین نے اس جلسہ میں متعدد کووڈ سے متاثرہ افراد شریک ہوئے تھے اورمنتظمین نے اس بات کو پوشیدہ رکھا تھا۔ شاہجہاں پورپولیس نے میں تبلیغی جماعت کے اراکین پرسنگین دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔ پولیس نے تھائی لینڈ کے 9 افراد اور تمل ناڈو کے دو اراکین سمیت 12 لوگوں کو شاہجہاں پور کی ایک مسجد سے گرفتار کیا تھا۔ اس کیس کی سماعت ہائی کورٹ کی ہدایت پر بریلی کی عدالت میں ہوئی ۔عدالت نے روز تھائی لینڈ کے نو، تمل ناڈو کے دو اراکین سمیت 12افراد کو بے گناہ قرار دیتے ہوئے بری کرنے کا حکم دیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button