کپڑے اور جوتے جنوری سے ہوجائیں گے مہنگے _ جانئے کیوں !

نئی دہلی _مرکزی حکومت نے تیار شدہ مصنوعات جیسے ملبوسات ( ریڈی میڈکپڑے)  ٹیکسٹائل اور جوتے پر لاگو گڈز اینڈ سروسز ٹیکس (جی ایس ٹی) کو 5 فیصد سے بڑھا کر 12 فیصد کردیا ہے، جو یکم  جنوری 2022 سے لاگو ہوگا۔

اس کی اطلاع سنٹرل بورڈ آف ان ڈائرکٹ ٹیکس اینڈ کسٹمز (سی بی آئی سی) نے 18 نومبر کو ایک اعلامیہ جاری کرتے ہوئے دی ہے ۔

کپڑوں پر جی ایس ٹی کی شرح یکم جنوری 2022 سے 5 فیصد سے بڑھا کر 12 فیصد کر دی گئی ہے اور کسی بھی قیمت کے ملبوسات پر جی ایس ٹی بڑھا کر 12 فیصد کر دیا گیا ہے، اس سے پہلے جب 1,000 روپے تک کی قیمت کے کپڑے خریدے جاتے تو اس پر 5 فیصد جی ایس ٹی ہوتا تھا۔اب یکم جنوری سے 12 فیصد جی ایس ٹی وصول کیا جائے گا۔

ٹیکسٹائل کی اشیاء بشمول بنے ہوئے کپڑے، مصنوعی سوت، کمبل، خیمے،  ٹیبل کلاتھ یا سرویٹ، قالین  بھی 5 فیصد سے بڑھا کر 12 فیصد کر دی گئی ہیں اور کسی بھی قیمت کے جوتے کی خریدی پر 5 فیصد سے بڑھا کر 12 فیصد کر دی گئی ہیں۔ ایک ہزار روپے تک کے جوتے خریدنے پر 12 فیصد جی ایس ٹی ادا کرنا ہوگا۔